Wednesday , July 18 2018
Home / شہر کی خبریں / عثمانیہ یونیورسٹی ٹیچرس اسوسی ایشن کی کل سے غیر معینہ بھوک ہڑتال

عثمانیہ یونیورسٹی ٹیچرس اسوسی ایشن کی کل سے غیر معینہ بھوک ہڑتال

کانٹری بیوٹری پنشن اسکیم کے بجائے قدیم اسکیم کی بحالی کامطالبہ
حیدرآباد ۔ 16 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز) : عثمانیہ یونیورسٹی ٹیچرس اسوسی ایشن نے 18 اپریل سے غیر معینہ بھوک ہڑتال کا فیصلہ کیا ہے کیوں کہ یونیورسٹی کے حکام ایک خصوصی اسکیم کے تحت تقرر کردہ ٹیچرس کے ساتھ کانٹری بیوٹری پنشن اسکیم پر عمل نہیں کررہی ہے ۔ جب کہ اس اسکیم کا نفاذ یکم ستمبر 2004 سے ہوا ۔ ریاستی حکومت نے سی پی ایس اسکیم کو متعارف کروانے کے لیے سرکاری حکمنامہ بھی جاری کیا تھا ۔ اسوسی ایشن کے لیے قدیم اسکیم کو دوبارہ بحال کرتے ہوئے اسے لاگو کرنے کا مطالبہ کیا ۔ یہ بات آج پریس کانفرنس میں پروفیسر بی ستیہ نارائنا صدر اور پی کرشنا نائب صدر ، ڈاکٹر بی لوسنیا نائب صدر ڈاکٹر پی شنکر خازن نے عثمانیہ یونیورسٹی کے گیسٹ ہاوز میں منعقدہ پریس کانفرنس میں کیا ۔ اس اسکیم کا باضوابطہ طور پر یونیورسٹی نے یکم اپریل 2001 سے نفاذ بھی عمل میں لایا جو کہ ملازمین کے بڑے مسائل پیدا کررہا ہے ۔ اس لیے ضروری ہے کہ یونیورسٹی کے حکام اس غیر ضروری ایل آئی سی سے مربوط پنشن اسکیم کو فوری برخواست کرے ۔ انہوں نے بتایا کہ 15 اپریل کو بھی نامپلی میں بھی ایک بڑا احتجاج منظم کیا گیا تھا کہ وہ ایجنٹ کے رویہ سے باز آجائے ۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ کے وجود میں آنے کے بعد اس بات کو سمجھا جارہا تھا کہ ملازمین کے مسائل کو حل کیا جائے گا لیکن ٹی آر ایس حکومت کا معاملہ بھی پچھلی حکومتوں سے کم نہیں ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT