Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / عثمانیہ یونیورسٹی کی 2018 میں صدی تقاریب

عثمانیہ یونیورسٹی کی 2018 میں صدی تقاریب

صدرجمہوریہ یا وزیر اعظم کو شرکت کی دعوت
حیدرآباد ۔ 11 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : عثمانیہ یونیورسٹی کی صدی تقاریب سال 2018 میں منعقد ہوں گی اور یونیورسٹی انتظامیہ ان تقاریب میں شرکت کے لیے صدر جمہوریہ پرنب مکرجی یا وزیر اعظم نریندر مودی کو مدعو کرنے کا ارادہ رکھتا ہے ۔ صدی تقاریب کے اہتمام کے لیے یونیورسٹی جلد ہی ایک مکمل درجہ کی کمیٹی تشکیل دے گی جس میں مختلف کالجس کے پرنسپالس ، پروفیسرس اور ڈینس شامل ہوں گے ۔ یہ کمیٹی صدی تقاریب سے متعلق پروگرامس کو قطعیت دے گی ۔ سال 2018 میں عثمانیہ یونیورسٹی کے قیام کے ایک سو سال مکمل ہوں گے ۔ آصف سابع نظام حیدرآباد نواب عثمان علی خاں نے 1918 میں یہ یونیورسٹی قائم کی تھی جنوبی ہند میں یہ تیسری قدیم ترین یونیورسٹی ہے ۔ یہ پہلی اردو یونیورسٹی تھی جہاں کا ذریعہ تعلیم اردو تھا ۔ صدی تقاریب کے حصہ کے طور پر یونیورسٹی نے نئی اڈمنسٹریٹیو بلڈنگ کی تعمیر شروع کی ہے جو 55 سال سے قائم موجودہ عمارت کی جگہ لے گی ۔ نئی عمارت کو صدی اڈمنسٹریٹیو بلڈنگ سے موسوم کیا جائے گا ۔ نئی بلڈنگ کی تعمیر کے لیے حکومت نے دس کروڑ روپئے منظور کئے ہیں ۔ عثمانیہ یونیورسٹی نے ای میل اڈریس [email protected] جاری کیا ہے ۔ سابق طلبہ ریٹائرڈ پروفیسرس تدریسی و غیر تدریسی اسٹاف تقاریب کے لیے اپنا اندراج کراسکتے ہیں ۔ رجسٹرار عثمانیہ یونیورسٹی پروفیسر ای سریش کمار نے کہا کہ صدی تقاریب شایان شان طور پر منعقد ہوں گی اور حکومت یونیورسٹی کو تمام مدد فراہم کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ہم صدر جمہوریہ یا وزیراعظم کو تقاریب میں شرکت کی دعوت دینے کا ارادہ رکھتے ہیں ۔ ایک سینئیر عہدیدار نے کہا کہ یونیورسٹی تقاریب کے سلسلہ میں سمینار اور ورکشاپس منعقد کرے گی ۔ 1960 کے دہے سے اب تک کے سابق طلبہ کے بیاچس کے اجتماعات بھی منعقد کئے جائیں گے ۔۔

TOPPOPULARRECENT