عثمان خواجہ نے ایک اننگز میں کئی ریکارڈ بناڈالے

دبئی۔12 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان کے خلاف پہلے ٹسٹ میچ میں عثمان خواجہ کی شاندار سنچری کی بدولت آسٹریلیا نے میچ ڈرا کرنے کے ساتھ کئی نئے ریکارڈ بھی اپنے نام کر لئے ہیں۔ پاکستان نے دبئی ٹسٹ میں آسٹریلیا کو کامیابی کے لئے 462 رنز کا ہدف دیا تھا۔آسٹریلیا نے پاکستان کے خلاف میچ کی چوتھی اننگز میں 139.5اوورز تک بیٹنگ کی جو تکنیکی اعتبار سے آسٹریلیا کی ٹسٹ کرکٹ کی تاریخ میں ڈرا میچ کی طویل ترین اننگز ہے۔ گیندوں کے اعتبار سے آسٹریلیا نے ڈرا ٹسٹ میں اپنی سب سے طویل چوتھی اننگز 1961میں ویسٹ انڈیز کے خلاف ایڈیلیڈ میں کھیلی تھی جب 8 گیندوں کا اوور ہوتا تھا اور آسٹریلیائی ٹیم نے 120اوورز کا سامنا کرتے ہوئے جملہ 960گیندیں کھیلی تھیں۔ 10یہ مجموعی طور پر آسٹریلیا کی چھٹی اور ایشیا میں کھیلی گئی چوتھی طویل ترین چوتھی اننگز ہے۔دوسری جانب مین آف دی میچ کا ایوارڈ حاصل کرنے والے عثمان خواجہ آسٹریلیا کی جانب سے چوتھی اننگز میں طویل ترین اننگز کھیلنے والے بیٹسمین بن گئے جبکہ مجموعی طور پر وہ مائیک ایتھرٹن کے بعد یہ اعزاز حاصل کرنے والے دوسرے بیٹسمین ہیں۔ ٹسٹ کرکٹ کی تاریخ میں چوتھی اننگز میں سب سے طویل اننگز کھیلنے کا ریکارڈ مائیک ایتھرٹن کے پاس ہے جنہوں نے 1995 میں جنوبی افریقہ کے خلاف 645 منٹ تک بیٹنگ کی تھی جبکہ عثمان خواجہ نے دبئی ٹیسٹ 524 منٹ تک بیٹنگ کر کے یہ کارنامہ انجام دیا۔ عثمان خواجہ نے اس میچ میں مجموعی طور پر 767 منٹ تک بیٹنگ کی اور اس طرح وہ آسٹریلیا کی جانب سے کسی بھی ٹسٹ میچ میں سب سے زیادہ منٹ تک بیٹنگ کرنے والے کھلاڑیوں کی فہرست میں تیسرے نمبر پر آ گئے۔ اس سلسلے میں مارک ٹیلر سرفہرست ہیں جنہوں نے آج سے ٹھیک 20 سال قبل پاکستان ہی کے خلاف کراچی ٹسٹ میچ میں 334 اور 92 رنز کی اننگز کے دوران مجموعی طور پر 938 منٹ تک بیٹنگ کی تھی۔ اس کے علاوہ عثمان خواجہ نے ایک اور منفرد ریکارڈ بھی اپنے نام کر لیا اور وہ پاکستان میں پیدا ہونے والے واحد کرکٹر ہیں جنہوں نے ٹسٹ کرکٹ میں پاکستان ہی کے خلاف سنچری اسکور کی۔

TOPPOPULARRECENT