Sunday , August 19 2018
Home / شہر کی خبریں / عدالتی احکام کی خلاف ورزی پر جے اے سی برہم

عدالتی احکام کی خلاف ورزی پر جے اے سی برہم

حکومت اور پولیس کے طرز عمل کے خلاف عدالت سے رجوع ہونے پر غور
حیدرآباد ۔ 11ڈسمبر ( سیاست نیوز) تلنگانہ عوام کے ساتھ انصاف کرنے کے مطالبہ پر جدوجہد کرنے والی تلنگانہ پولیٹیکل جوائنٹ ایکشن کمیٹی نے پھر ایکبار حکومت کے طرز عمل اور پولیس کی جانب سے جے اے سی قائدین کو حراست میں لینے و گرفتار کرنے کے مسئلہ پر عدالت سے رجوع ہونے پر سنجیدگی سے غور کررہی ہے ۔ حصول ملازمتوں کیلئے جدوجہد ( ملازمتوں کیلئے جھگڑا ) پروگرام میں شرکت کیلئے آنے والوں کو نہ روکنے کی ہدایت دیئے جانے کے باوجود ریاست تلنگانہ کے کئی علاقہ جات میں تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے قائدین کو حراست میں لینے و گرفتار کر کے پولیس عہدیداروں اور حکومت کی جانب سے عدالتی احکامات کی خلاف ورزی کرنے پر تلنگانہ پولیٹیکل جوائنٹ اکشن کمیٹی قائدین نے اپنی شدید برہمی کا اظہار کیا اور کہا کہ عدالتی احکامات کی خلاف ورزی کرنے والے پولیس عہدیداروں اور حکومت کے تعلق سے ہائیکورٹ میں شکایت کرنے کا تلنگانہ جے اے سی نے فیصلہ کیا ہے ۔ تلنگانہ پولیٹیکل جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے ذرائع نے یہ بات بتائی اور کہا کہ حصول ملازمتوں کیلئے جدوجہد کے جلسہ عام منعقد کرنے کی اجازت دینے کیلئے متعدد مرتبہ خواہش کرنے کے باوجود جلسہ منعقد کرنے کی اجازت نہ دیئے جانے پر ہی تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی نے ہائیکورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا تھا اور ہائیکورٹ احکامات کی روشنی میں گذشتہ دنوں یعنی 4 ڈسمبر کو جلسہ منعقد کرنے کی پولیس نے اجازت دی تھی اور اس جلسہ کا کامیاب انعقاد عمل میں آیا لیکن تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی قائدین نے کہا کہ اضلاع سے ریاست کی راجدھانی شہر حیدرآباد کو جلسہ میں شرکت کیلئے آنیوالے جے اے سی قائدین اور کارکنوں کو جلسہ میں شرکت کرنے سے روکتے ہوئے انہیں حراست میں لیتے ہوئے گرفتار کیا گیا اور ان تمام واقعات کی مکمل تفصیلات اکھٹا کی جارہی ہیں اور آئندہ دو تین یوم میں مکمل حقائق پر مبنی تفصیلات اکھٹا کرلی جائیں گی تاکہ ہائیکورٹ سے حکومت اور پولیس کے اختیار کردہ طرز عمل کی شکایت کی جاسکے ۔

TOPPOPULARRECENT