Monday , April 23 2018
Home / شہر کی خبریں / عدالتی فیصلہ کی نقل کے حصول کے بعد تجزیہ کیا جائے گا

عدالتی فیصلہ کی نقل کے حصول کے بعد تجزیہ کیا جائے گا

اسپیشل پبلک پراسکیوٹر این آئی اے ہریناتھ کا بیان
حیدرآباد 16 اپریل (سیاست نیوز) نیشنل انوسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) کے اسپیشل پبلک پراسکیوٹر مسٹر ہریناتھ نے آج کہاکہ وہ عدالت کے فیصلے کی کاپی حاصل کرنے کے بعد اُس کا تجزیہ کریں گے اور این آئی اے کے اعلیٰ عہدیداروں کے مشورے پر مزید کارروائی کریں گے۔ مسٹر ہریناتھ نے کہاکہ 100 صفحات پر مشتمل فیصلے کی کاپی حاصل کی جائے گی اور اُس کا تفصیلی تجزیہ کیا جائے گا تاکہ فیصلے کے خلاف اعلیٰ عدالت سے رجوع ہوسکے۔ این آئی اے کی خصوصی عدالت کی جانب سے مکہ مسجد بم دھماکہ کیس کے پانچوں ملزمین بشمول سوامی اسیمانند کو برأت حاصل ہونے کے ضمن میں اُنھوں نے کہاکہ عدالت نے سوامی اسیمانند کے پنچ کولہ کورٹ میں دیئے گئے رضاکارانہ اقبالیہ بیان جو سی آر پی سی کی دفعہ 164 کے تحت قلمبند کیا گیا تھا کو قبول کرنے سے انکار کردیا تھا۔ اقبالیہ بیان کے چند دن بعد اسیمانند نے صدرجمہوریہ، وزیراعظم اور مرکزی وزیرداخلہ کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے عدالت میں دیئے گئے اپنے اقبالیہ بیان کے سلسلہ میں بتایا کہ اُنھیں تحقیقاتی ایجنسی کی جانب سے بیان دینے پر مجبور کیا گیا تھا جس کے نتیجہ میں اُنھوں نے اپنا بیان قلمبند کروایا تھا۔

TOPPOPULARRECENT