Tuesday , August 21 2018
Home / ہندوستان / عدلیہ اور تعلیم میں اصلاحات کی ضرورت : جیٹلی

عدلیہ اور تعلیم میں اصلاحات کی ضرورت : جیٹلی

پونے 17 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی نے آج کہا کہ عدلیہ اور تعلیم کے شعبہ جات میں انقلابی اصلاحات کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان شعبوں میں طویل عرصہ سے اصلاحات کا عمل نہیں کیا گیا ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ نوجوانوں کو مناسب تربیت دینے کی بھی ضرورت ہے تاکہ وہ زندگی کے تمام شعبہ جات میں مستقبل کے لیڈر بن سکیں۔ جیٹلی نے یہاں سمبیاسیس انٹرنیشنل کے 14 ویں کانوکیشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہماری عدلیہ اور تعلیمی شعبہ جات میں انقلابی اصلاحات کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان دو شعبوں میں اس کی شدت سے ضرورت محسوس کی جا رہی ہے ۔ اس بات کی وضاحت کے بغیر کہ اصلاحات کی نوعیت کیا ہونی چاہئے جیٹلی نے کہا کہ اس بات کی ہر کوشش کی جانی چاہئے کہ اس ملک کے لاکھوں نوجوانوں کو بہترین تربیت دی جاسکے تاکہ وہ لوگ زندگی کے ہر شعبہ میں مستقبل کے لیڈر بن سکیں۔ انہوں نے یہاں سے گریجویشن کرنے والے طلبا کو مشورہ دیا کہ وہ خود کو ان ممالک کی مدد کیلئے تیار کریںاور تربیت حاصل کریں جنہیں آبادی میں کمی کی وجہ سے بحران کا سامنا ہے ۔ وزیر فینانس نے کہا کہ ہندوستان کی صلاحیتوں سے بہتر استفادہ کا یہ بہترین راستہ ہے ۔

TOPPOPULARRECENT