Saturday , January 20 2018
Home / عرب دنیا / عراق : رمادی کے دفاع کیلئے 4000 رضا کاروں کی روانگی

عراق : رمادی کے دفاع کیلئے 4000 رضا کاروں کی روانگی

بغداد 12 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) عراق تقریبا 4,000 رضا کاروں کو بغداد کے جنوب میں رمادی منتقل کر رہا ہے تاکہ وہاں عسکریت پسندوں کے ساتھ جاری لڑائی میں سرکاری افواج کی حوصلہ افزائی ہوسکے ۔حکام نے آج یہ بات بتائی ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ تقریبا 2,500 رضاکار رمادی میں پہونچ چکے ہیں اور ان کے ساتھ مزید 1,500 والینٹرس پہونچنے والے ہیں۔ جنرل رشید فلا

بغداد 12 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) عراق تقریبا 4,000 رضا کاروں کو بغداد کے جنوب میں رمادی منتقل کر رہا ہے تاکہ وہاں عسکریت پسندوں کے ساتھ جاری لڑائی میں سرکاری افواج کی حوصلہ افزائی ہوسکے ۔حکام نے آج یہ بات بتائی ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ تقریبا 2,500 رضاکار رمادی میں پہونچ چکے ہیں اور ان کے ساتھ مزید 1,500 والینٹرس پہونچنے والے ہیں۔ جنرل رشید فلایہ نے یہ بات بتائی جو صوبہ عنبر میں کارروائیوں کے کمانڈر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان افراد کو بغداد سے ہیلی کاپٹرس کے ذریعہ رمادی منتقل کیا جا رہا ہے ۔ یہ رضاکار شیعہ رہنما آیت اللہ علی السیستانی کی اپیل پر عسکریت پسندوں کے مقابلہ کیلئے سرکاری فوج کی اعانت کرنے آگے آئے ہیں۔

عسکری گروپس نے گذشتہ ایک ماہ کے دوران ملک کے شمال اور مغرب کے علاقوں میں وسیع علاقہ پر قبضہ کرلیا ہے ۔ اس دوران عراق کے حقوق انسانی گروپس کا ادعا ہے کہ ان کارروائیوں کے دوران یہاں مسلکی اختلافات میں شدت پیدا ہوتی جا رہی ہے ۔ ان کا کہنا ہے کہ عراقی سکیوریٹی فورسیس اور حکومت سے تعلق رکھنے والے ملیشیا کی جانب سے عراق کے چھ شہروں اور گاووں میں 9 جون کے بعد سے تقریبا 255 قیدیوں کو ہلاک کردیا گیا ہے ۔ ان کا کہنا ہے کہ ان میں پانچ اجتماعی قتل اس وقت کئے گئے جبکہ سرکاری افواج عسکریت پسندوں کی پیشرفت کے پیش نظر پسپا ہو رہی تھیں۔ عسکری گروپس ہر بھی اس طرح کی کارروائیوں کے ذریعہ کئی افراد کا اغوا کرنے اور ان کا قتل کردینے کا الزام عائد کیا گیا ہے ۔ فوج کا کہنا ہے کہ عسکریوں نے 170 سپاہیوں کو ہلاک کیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT