عراق میں آئی ایس کے خلاف فوجی کارروائی

بغداد 11 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) عراقی افواج نے آج فوجی کارروائیوں کا آغاز کیا تاکہ ملک میں آئی ایس گروپ کے کنٹرول والے آخری علاقہ کو بھی دوبارہ حاصل کرلیا جائے ۔ آپریشن کے کمانڈر نے یہ بات بتائی ۔ کہا گیا ہے راوا ٹاؤن کی وادی فرات اور قریبی گاووں کو سرکاری افواج نے پیچھے چھوڑ دیا ہے اور انہوں نے گذشتہ ہفتہ القائم ٹاؤن تک رسائی حاصل کرلی تھی ۔ جنرل عبدالامیر یاراللہ نے کہا کہ سرکاری افواج اور اتحادی ملیشیا کی جانب سے رومانہ اور راوا علاقوں کو آئی ایس کے قبضہ سے آزاد کروانے کیلئے بڑے پیمانے پر کارروائی شروع کی گئی ہے ۔ رومانہ کا علاقہ فرات کے شمال میں واقع ہے اور یہ القائم کے سامنے ہے ۔ راوا وہ آخری علاقہ ہے جس پر اب بھی آئی ایس کا قبضہ ہے ۔ یہاں آ:ی ایس کے لڑاکوں کا دمشق کی افواج سے شام کے علاقوں میں اب بھی ٹکراؤ چل رہا ہے ۔ یہاں اتحادی افواج بھی سرگرم ہیں ۔ شام کی فوج نے البو کمال نامی شہر میں آئی ایس کے خلاف اپنی کامیابی کا اعلان بھی کردیا تھا تاہم آئی ایس کے لڑاکوں کو شمالی علاقہ میں پیچھے ڈھکیل دیا گیا تھا جہاں سے وہ اس علاقہ کے کچھ حصہ پر اب بھی کنٹرول رکھتے ہیں۔ ان علاقوں پر پہلے سرکاری اور امریکی تائید والی کرد افواج کا قبضہ رہا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT