Monday , October 22 2018
Home / عرب دنیا / عراق کی کامیابی کمزور ‘ امریکی فوجیوں کی تخفیف

عراق کی کامیابی کمزور ‘ امریکی فوجیوں کی تخفیف

فرار ہونے والے شہریوں کی وطن واپسی ‘ عراقی اور امریکی فوجی کمانڈرس کاکمزور کامیابی کا انتباہ

قائم (عراق) ۔18فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) عراق کے انتہائی مغربی کنارے پر ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے امریکہ کے لیفٹننٹ کائل ہیگر اور ان کے فوجی شہریوں کے اس علاقہ میں داخلہ کے خاموش تماشائی بنے رہے جب کہ افریقی اور عراقی افواج نے دولت اسلامیہ کے نیم فوجی جنگجوؤں کو علاقہ سے خارج کردیا ۔ سمجھا جاتا ہے کہ ان کے ارکان خاندان اپنے آزاد کردہ قیامگاہوں کو واپس آرہے ہیں ۔ انہیں امید ہے کہ عراق میں مزید استحکام پیدا ہوگا لیکن جب حالیہ ہفتہ میں طلایہ گردی کرنے والے فوجیوں سے انٹرویو لئے گئے تو ظاہر ہوا ہے کہ یہ ایک غلط فہمی ہے ۔ ارکان خاندان پناہ کی تلاش میں اپنے قیامگاہوں کو واپس آئے ہیں کیونکہ اس علاقہ سے انتہا پسندوں کو نکال باہر کیا گیا ہے ۔ واپس آنے والوں میں مصنفین بھی شامل ہیں ۔ شیعہ نیم فوجی جنگجوؤں نے اس علاقہ پر دولت اسلامیہ کے عسکریت پسندوں کو شکست دیتے ہوئے قبضہ کرلیا ہے لیکن انہیں ورثہ میں ملاجلا امن حاصل ہوا ہے ۔ کیونکہ عراق کی فوجوں کو امریکی فوجوں نے عسکریت پسندوں کو شکست دینے میں مدد کی تھی لیکن امریکہ نے اپنی تعینات فوج کی تعداد میں تخفیف کردی ہے ۔ کئی افراد انتہا پسندوں سے چھوڑے ہوئے ہتھیاروں اور گولہ بارود پر قابض ہوگئے ہیں ۔ امریکہ زیر قیادت متحدہ فوج جو دولت اسلامیہ کے خلاف گذشتہ اگست میں جنگ کرچکی ہے اب کم تعداد میں باقی رہ گئی ہے کیونکہ امریکی فوجی عراق چھوڑ کر وطن واپس ہوچکے ہیں ۔ امریکہ اور عراق کے تمام کمانڈرس نے جو مغربی عراق میں تعینات ہیں انتباہ دیا ہے کہ ان کی یہ کامیابی فیصلہ کن نہیں ہے کیونکہ عراق سے امریکی فوجیوں کی کثیر تعداد واپس جارہی ہے ۔ عراق کی اقلیتی برادری اور امریکہ کی موجودگی کی وجہ سے دولت اسلامیہ کے جنگجو خوفزدہ تھے ۔ عراق کی اقلیتی برادری کے نقطہ نظر سے امریکہ کی موجودگی شیعہ غلبہ والی مرکزی حکومت کیلئے تقویت کا باعث تھی ۔ اس کے باوجود ایرانی تائیدیافتہ نیم فوجی جنگجو بغداد میں غلبہ رکھتے ہیں اور وہ امریکہ کے تخلیہ کی پابجائی کرنے کیلئے عراقی فوجوں میں شامل ہورہے ہیں لیکن امریکی فوجیوں کی روانگی سے عراق کی فوج تشویش میں مبتلا ہے اور بے چینی محسوس کررہے ہیں ۔ ان کے دل اور دماغ پر یہ خوف طاری ہے کہ امریکیوں کی روانگی سے عراق کی فوج کمزور ہوجائے گی ۔

TOPPOPULARRECENT