Thursday , November 23 2017
Home / Top Stories / اور عرب ممالک کے مذاکرات پر زور G-7

اور عرب ممالک کے مذاکرات پر زور G-7

پناہ گزینوں کے تنازعہ پر جرمنی کا مطالبہ، امریکہ مزید افراد کو قبول کرنے آمادہ
برلن ؍ واشنگٹن ۔ 9 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) جرمنی نے آج کہا کہ وہ G-7 اور عرب ممالک کے درمیان جاریہ ماہ ایک اجلاس طلب کرنے پر زور دے گا تاکہ شامی پناہ گزین بحران کی یکسوئی کی جاسکے اور امریکی پناہ گزین محکمہ کیلئے مزید فنڈس فراہم کئے جاسکیں۔ وزیرخارجہ جرمنی فرینک والٹر اسٹن میر نے کہاکہ یہ اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے پناہ گزین کی جانب سے اتنی کم رقمی امداد دی گئی ہے غذائی اجناس کا راشن مشرق وسطیٰ کے پناہ گزین کیمپوں کو آدھی مقدار میں فراہم کیا جارہا ہے۔ پارلیمنٹ میں تقریر کرتے ہوئے اسٹین میر نے کہاکہ وہ G-7 کے وزرائے خارجہ اور عرب ممالک کے وزرائے خارجہ کی ایک چوٹی کانفرنس جنرل اسمبلی کے اجلاس کے دوران علحدہ طور پر منعقد کرنے کی تجویز پیش کریں گے۔ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کا اجلاس 15 ستمبر سے شروع ہورہا ہے۔

اسٹین میر نے کہا کہ نیویارک میں اس ایک ہفتہ طویل اجلاس کے دوران  G-7 اور عرب ممالک کا ایک مختصر اجلاس منعقد کرنے کیلئے وہ دعوت نامے جاری کریں گے اور انہیں درحقیقت ان لوگوں کے مستقبل کی فکر لاحق ہے اور وہ اس بات کو یقینی بنانا چاہتے ہیں کہ اقوام متحدہ کے شعبہ پناہ گزینوں کو اتنی رقم حاصل ہوجائے کہ وہ روزانہ کی غذائی ضروریات کی تکمیل کرسکے۔ ایک سرکاری عہدیدار نے کہاکہ ایسے مذاکرا کی منصوبہ بندی جاری ہے تاہم اس  نے تفصیلات کا انکشاف نہیں کیا۔ جرمنی نے ریکارڈ تعداد میں پناہ گزینوں کو قبول کیا ہے جو شام اور عراق کی خانہ جنگی سے فرار ہوکر جرمنی منتقل ہوئے ہیں۔ جاریہ سال ان کی تعداد 8 لاکھ ہوجانے کا اندیشہ ہے۔ جرمنی جون میں G-7 کی ایک چوٹی کانفرنس کی میزبانی کرچکا ہے۔ جرمنی سے اس گروپ کی صدارت جاپان کو منتقل کی گئی ہے۔ واشنگٹن سے موصولہ اطلاع کے بموجب وزیرخارجہ امریکہ جان کیری نے کہا کہ امریکہ پناہ گزینوں کی اس تعداد میں اضافہ کیلئے تیار ہے جو اس نے اب تک قبول کی ہے تاکہ لاکھوں پناہ گزینوں کا بوجھ سنبھالنے میں امریکہ کے حلیف یوروپی ممالک کی مدد ہوسکے۔ امریکی کانگریس کا ایک بند کمرہ اجلاس منعقد ہوا تھا، جس میں صدربارک اوباما نے واضح کردیا تھا کہ امریکہ انسانی مسائل پر قاعدہ کردار ادا کرنا چاہتا ہے۔ شام اور یورپ میں پناہ گزینوں کی تعداد کی وجہ سے جو بحران پیدا ہوگیا ہے اس کو کم کرنے کیلئے امریکہ مزید پناہ گزینوں کو قبول کرنے کیا ہے۔ وزیرخارجہ امریکہ نے ایوان نمائندگان اور سینٹ کی عدالتی کمیٹیوں سے ملاقات کی۔ تاہم انہوں نے ان پناہ گزینوں کی تعداد کی وضاحت نہیں کی، جنہیں قبول کرنے پر امریکہ آمادہ ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT