Friday , December 15 2017
Home / ہندوستان / عشرت مقدمہ میں دوسرے حلفنامہ کا دفاع: موئیلی

عشرت مقدمہ میں دوسرے حلفنامہ کا دفاع: موئیلی

نئی دہلی 3 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) سابق وزیر قانون ویرپا موئیلی نے عشرت جہاں مقدمہ پر جاری بحث کا ایک حصہ بنتے ہوئے یو پی اے حکومت کے دائر کردہ دوسرے حلفنامہ کو منصفانہ قرار دیا۔ اُنھوں نے اُس وقت کے معتمد داخلہ جی کے پلّے پر اِس معاملہ سے خود کو لاتعلق قرار دینے پر نکتہ چینی کی۔ اُنھوں نے کہاکہ بحیثیت معتمد داخلہ پلّے نے دوسرا حلفنامہ داخل کیا لیکن آج وہ اپنی ذمہ داری سے خود کو لاتعلق قرار دے رہے ہیں۔ وہ سمجھتے ہیں کہ یہ انتہائی قابل مذزت حرکت ہے۔ جس وقت متنازعہ دوسرا حلف نامہ داخل کیا گیا تھا، ویرپا موئیلی وزیر قانون تھے۔ اُس وقت کی یو پی اے حکومت نے دو حلفنامے داخل کئے تھے۔ پلے نے کل یہ دعویٰ کیا تھا کہ سابق وزیرداخلہ پی چدمبرم نے اصل حلفنامہ عدالت میں دائر کئے جانے کے ایک ماہ بعد فائیل واپس طلب کرلی جس میں عشرت جہاں اور ہلاک ہونے والے اُس کے ساتھیوں کو لشکر طیبہ کارکن قرار دیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT