Thursday , September 20 2018
Home / دنیا / عصمت ریزی کرنے والے کو 20 سال بعد سزائے موت

عصمت ریزی کرنے والے کو 20 سال بعد سزائے موت

بیجنگ ۔ 24 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ایک 50 سالہ شخص جس کے ڈی این اے نمونہ کی وجہ سے چینی پولیس کو 20 سال کے طویل عرصہ کے بعد بھی اسے گرفتار کرنے میں مدد دی اور اس طرح دو خواتین کی عصمت ریزی اور ان میں سے ایک کو قتل کرنے والے اس شخص کو سزائے موت دی گئی۔ ہونگزو انٹرنیشنل پیوپلز کورٹ نے ملزم قیان کاٹگوئی کی تاحیات ان کے سیاسی حقوق سے بھی محروم کردیا۔ اطلاعات کے مطابق 1993ء اور 1994ء میں قیان نے دو علحدہ علحدہ موقعوں پر دو خواتین کی عصمت ریزی کی تھی جبکہ ان میں سے ایک کی موت ہوگئی تھی اور دوسری شدید طور پر زخمی ہوئی تھی جبکہ ژینہوا خبر رساں ایجنسی کا کہنا ہیکہ قیان کو 1984ء میں چھ سال کی سزائے قید بھگتنا پڑی تھی کیونکہ وہ متعدد خواتین کے جنسی استحصال کا مرتکب پایا گیا تھا حالانکہ ملزم کو گرفتار کرنے کی کوششوں کا سلسلہ گذشتہ20 سالوں سے جاری تھا لیکن وہ کسی نہ کسی طرح گرفتاری سے بچتا رہا لیکن حالیہ دنوں میں پولیس ملزم کے ڈی این اے نمونے حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئی اور متاثرہ خاتون کے جسم پر پائے جانے والے مادہ منویہ کے نمونوں سے (جو پولیس کی فارنسک لیاب میں محفوظ تھے) جب انہیں ملایا گیا تو وہ ملزم قیان کے ثابت ہوئے۔

TOPPOPULARRECENT