Tuesday , November 21 2017
Home / دنیا / عصمت ریزی کی روک تھام کیلئے خاتون سائنسداں کی نئی ایجاد

عصمت ریزی کی روک تھام کیلئے خاتون سائنسداں کی نئی ایجاد

بوسٹن / چینائی ۔ 27 ۔ جولائی : ( سیاست ڈاٹ کام ) : مساچیوسیٹس انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی کی ہی ایک خاتون ہندوستانی سائنسداں نے اسٹیکر کی نوعیت کا ایک ایسا آلہ تیار کیا ہے جو کپڑے یا جسم کے کسی بھی حصہ پر چپکایا جاسکتا ہے اور اگر کسی خاتون کی عصمت ریزی کی کوشش کی گئی تو یہ آلہ آس پاس موجود لوگوں یا متاثرہ خاتون کے رشتہ داروں کو فورا چوکس کردے گا ۔ اس اسٹیکر کو کچھ اس انداز سے پروگرام کیا گیا ہے کہ وہ یہ بخوبی سمجھ سکے گا کہ کوئی خاتون خود کپڑے تبدیل کر رہی ہے یا اسے جبراً بے لباس کیا جارہا ہے ۔ اس کیلئے ایک بلیوٹوتھ کو اسمارٹ فون ایپ سے جوڑ دیا جائے گا ۔ جس کے بعد اسٹیکر سے ایک زور دار آواز نمودار ہوگی جو آس پاس کے لوگوں کو چوکس کردے گی یا پھر عصمت ریزی کا شکار خاتون کے ایسے ارکان خاندان کو چوکس کردے گی جن کی تفصیلات کا ڈیٹا ایپ میں اپ لوڈ کیا جاچکا ہو ۔ مثال کے طور پر اگر کسی خاتون کے جسم سے کوئی کپڑے اتارنے کی کوشش کررہا ہو تو اسمارٹ فون کو ایک پیغام روانہ کیا جائیگا اور یہ معلوم کیا جائیگا کہ آیا خاتون خود لباس تبدیل کر رہی ہے یا اس سے زبردستی کی گئی ہے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT