Sunday , December 17 2017
Home / جرائم و حادثات / عصمت ریزی کے ملزم نے رہائی کے

عصمت ریزی کے ملزم نے رہائی کے

اندرون 24 گھنٹے دوبارہ عصمت ریزی کی!

حیدرآباد ۔ /9 اکٹوبر (سیاست نیوز)  کم عمر لڑکی سے دست درازی کے الزام میں گرفتار اور اندرون 24 گھنٹے جیل سے رہائی کے بعد دوبارہ عصمت ریزی کرنے کے الزام میں چھتری ناکہ پولیس نے اجیت ساکن شیواجی نگر کے خلاف ایک اور مقدمہ درج کرلیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ /24 ستمبر کو کم عمر لڑکی کے پڑوسی اجیت جن کا تعلق اترپردیش سے بتایا جاتا ہے نے اپنے مکان میں بات چیت کے بہانے طلب کرکے عصمت ریزی کی تھی ۔ اچانک خرابی صحت کے سبب لڑکی کی ماں نے چھتری ناکہ پولیس سے شکایت درج کروائی جس کے نتیجہ میں تعزیرات ہند کے دفعہ 376 اور پوسکو ایکٹ کے تحت ایک مقدمہ درج کرلیا ۔ کچھ ہی دن قبل اجیت نے اسی لڑکی سے اپنے مکان میں دست درازی کی تھی جس کے نتیجہ میں چھتری ناکہ پولیس نے اسے نربھئے ایکٹ کے دفعہ 354D کے تحت ایک مقدمہ درج کرکے نامپلی کریمنل کورٹ میں پیش کیا تھا اور اندرون ایک دن وہ ضمانت پر رہا ہوگیا ۔ جیل سے واپس لوٹنے کے بعد اجیت نے اپنی کم عمر بہن اور بھائی سنیل اور قریبی رشتہ دار ستیش کی مدد سے یہ گھناؤنی حرکت انجام دی ۔ عصمت ریزی کا مقدمہ درج کرنے میں لاپرواہی کے سبب سابق کارپوریٹر مجلس بچاؤ تحریک مسٹر امجد اللہ خان خالد نے متعلقہ پولیس عہدیداروں سے نمائندگی کی جس کے نتیجہ میں پولیس فوری حرکت میں آکر اس کے خلاف ایک اور مقدمہ درج کرلیا ۔ پولیس عہدیداروں نے بتایا کہ دست درازی کے کیس میں اجیت کی ضمانت منسوخ کروائی جائے گی اور بعد ازاں اس کی گرفتاری عمل میں آئے گی ۔

TOPPOPULARRECENT