Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / عطا پور میں ایر کولر مینوفیکچرنگ یونٹ میں آتشزدگی، شٹرمقفل رہنے سے 6 ورکرس کی موت

عطا پور میں ایر کولر مینوفیکچرنگ یونٹ میں آتشزدگی، شٹرمقفل رہنے سے 6 ورکرس کی موت

A view of the spot where Six persons, including four workers, died in a fire accident at Triwheel Enterprises, which sells battery-operated vehicles and air coolers at Attapur opposite pillar number 159 in the early hours on Wednesday morning in Hyderabad . All six youths are native of NEURA, Mukhiya Palamau of Jharkhand state .Pic: style photo service.

حیدرآباد۔/22فبروری، ( سیاست نیوز) عطا پور میں آج ایر کولر مینوفیکچرنگ یونٹ میں اچانک آگ لگ گئی جس کے نتیجہ میں 6 افراد جھلس کر فوت ہوگئے۔ پولیس نے بتایا کہ صنعتی یونٹ کے مالک کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔ پولیس کی گشتی پارٹی نے تقریباً 5:15 بجے صبح اس یونٹ سے آگ کے شعلے نکلتے دیکھے اور فوری فائر ڈپارٹمنٹ کو مطلع کیا کیونکہ آگ تیزی سے پھیل چکی تھی۔ 4 فائر انجنس کی خدمات حاصل کی گئیں اور کافی محنت کے بعد آگ پر قابو پالیا گیا۔ پولیس عملہ جب یہاں پہنچا تو دیکھا کہ صنعتی یونٹ کے شٹر مقفل تھے۔ پولیس نے جب اسے کھولا تو 4 جھلسی ہوئی نعشیں دستیاب ہوئیں۔ ڈپٹی کمشنر پولیس ( شمس آباد زون ) پی وی پدمجا ریڈی نے کہا کہ 6 نعشوں کو پوسٹ مارٹم کیلئے عثمانیہ ہاسپٹل منتقل کیا گیا۔ انہوں نے بتایا کہ چھ کے منجملہ چار افراد کی عرفان، صدام، مجاہد اور سادھو کی حیثیت سے شناخت کی گئی۔ یہ تمام 20سال کی عمر کے ہیں اور ان کا تعلق جھار کھنڈ و بہار سے بتایا گیا۔ یہ صنعتی یونٹ پی وی این آر ایکسپریس وے پر مین روڈ کے قریب واقع ہے جہاں ایر کولرس اور بیاٹری سے چلنے والی گاڑیاں تیار کی جاتی ہیں۔ اس کے علاوہ یہ صنعتی یونٹ رہائشی علاقہ کے درمیان واقع ہے اور اسے گودام کے طور پر بھی استعمال کیا جارہا تھا۔ ڈی سی پی نے بتایا کہ صنعتی یونٹ کے مالک پرمود کو تحویل میں لے لیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عام طور پر 4 ورکرس یہاں کام کرتے رہتے تھے لیکن کل مزید دو ورکرس بھی شامل ہوگئے تھے۔ ڈی سی پی نے کہا کہ خاطر خواہ احتیاطی تدابیر اختیار نہیں کئے گئے۔ مقامی افراد کے مطابق شارٹ سرکٹ کے سبب یہ حادثہ پیش آیا۔ تاہم پدمجا نے کہا کہ تحقیقات کے بعد ہی وجوہات کا پتہ چل سکے گا۔ جی ایچ ایم سی کمشنر جناردھن ریڈی نے مقام حادثہ کا معائنہ کیا اور کہا کہ حکومت مہلوکین کے ارکان خاندان کو 5لاکھ روپئے کی مالی مدد کرے گی۔ باوثوق ذرائع کے مطابق پلر نمبر 160 کے قریب واقع اس گودام میں ورکرس کام کے علاوہ یہاں قیام بھی کرتے ہیں اور گودام کا مالک رات میں باہر سے اسے مقفل کردیتا ہے۔ آج رات جب گودام میں آگ لگ گئی تو ان مزدوروں کو باہر نکلنے کا کوئی راستہ نہیں تھا سمجھا جاتا ہے کہ گودام میں موجود سلینڈر پھٹنے کی وجہ سے آگ لگی اور دھماکہ کے سبب گودام کی چھت بھی اُڑ گئی۔ پولیس نے مالک پرمود کے خلاف سنگین دفعات بشمول اقدام قتل کا مقدمہ درج کیا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT