Sunday , September 23 2018
Home / شہر کی خبریں / علاقائی جماعتیں تلگودیشم کے ساتھ متحد ہوجائیں : چندرا بابو نائیڈو

علاقائی جماعتیں تلگودیشم کے ساتھ متحد ہوجائیں : چندرا بابو نائیڈو

اپوزیشن اقتدار والی ریاستوں سے ناانصافی کے خلاف آواز اٹھانا ضروری : چیف منسٹر اے پی
نئی دہلی 3 اپریل ( پی ٹی آئی ) صدر تلگودیشم و چیف منسٹر اے پی چندرا بابو نائیڈو نے کہا کہ علاقائی جماعتوں کو تلگودیشم کے ساتھ ہاتھ ملانا چاہئے تاکہ مرکز کی این ڈی اے حکومت کی جانب سے اپوزیشن جماعتوں کے اقتدار والی ریاستوں سے ناانصافی کے خلاف آواز اٹھائی جاسکے ۔ تلگودیشم سربراہ اپنی پارٹی کی این ڈی اے سے علیحدگی کے بعد پہلی مرتبہ دہلی پہونچے ۔ انہوں نے کہا کہ ان کی اولین ترجیح یہی ہے کہ مرکز پر اے پی کیلئے خصوصی موقف اور فنڈز کیلئے دباؤ ڈالیں۔ نائیڈو نے دہلی میں کئی اپوزیشن قائدین سے ملاقاتیں کیں۔ انہوں نے کہا کہ آج ان کی اولین ترجیح اپنی ریاست ہے ۔ ہم نے این ڈی اے سے علیحدگی اختیار کرلی کیونکہ حکومت ہمارے مطالبات کو نظر انداز کر رہی تھی ۔ یہ ناانصافی ہے ۔ چیف منسٹر نے بی جے پی قائدین ہیما مالینی اور جئینت سنہا کے علاوہ کچھ این ڈی اے حلیفوں سے بھی ملاقات کی ۔ انہوں نے واضح کیا کہ علاقائی جماعتوں اور بائیں بازو کی جماعتوں نے پارلیمنٹ میں تحریک عدم اعتماد پیش کرنے تلگودیشم کی کوششوں میں حمایت کی ہے ۔ انہوں نے پی ٹی آئی سے کہا کہ ہم ان کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ ہم کو مرکز پر دباؤ ڈالنے بھی ان کی مدد کی ضرورت ہے تاکہ ریاستوں کو نظر انداز کرنے کا سلسلہ بند ہوسکے ۔ نائیڈو نے پارلیمنٹ میں اپنی پارٹی کے ارکان سے بھی ملاقات کی اور بائیں بازؤ کے قائدین سے بھی خصوصی موقف کے مسئلہ پر بات چیت کی ۔ سی پی ایم لیڈر محمد سلیم نے چندر ا بابو نائیڈو سے ملاقات کے بعد کہا کہ ہم سب نے ملاقات کی ہے اور آندھرا پردیش کو خصوصی موقف کے مسئلہ پر بات چیت کی ہے ۔ ہم وزیر اعظم پر اعتماد اور بھروسہ کے تعلق سے بھی سوال کیا ہے ۔ ہم نے آندھرا پردیش کے ارکان پارلیمنٹ کیلئے موجودہ مایوس کن صورتحال پر بھی تبادلہ خیال کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بائیں بازو کے قائدین نے مسٹر نائیڈو کو اپنی تائید کا تیقن دیا ہے ۔ محمد سلیم نے کہا کہ ہم سب ان کے ساتھ ہیں اور ہمیں حکومت پر ایسے مسائل کیلئے زور دیتے رہنا چاہئے ۔

TOPPOPULARRECENT