Monday , December 11 2017
Home / اضلاع کی خبریں / علاقائی عوام کی ترقی کیلئے ہی چھوٹے اضلاع کی تشکیل

علاقائی عوام کی ترقی کیلئے ہی چھوٹے اضلاع کی تشکیل

سوچھ بھارت کیلئے جگتیال سرفہرست ، ضلع کلکٹر ڈاکٹر اے شرت کی پریس کانفرنس

جگتیال ۔ /26 ستمبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) جگتیال ضلع میں ضلع کلکٹر ڈاکٹر اے شرت نے آر ڈی او آفس کے کانفرنس ہال میں پرہجوم پریس کانفرنس کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ریاستی حکومت تلنگانہ کے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ریاست بھر میں چھوٹے اضلاع کی تشکیل کا مقصد عوام میں ہر محکمہ کے آفسران سے آسانی کے ساتھ ملاقات ہوسکے اور عوامی مسائل حل ہوسکے ۔ بنیادی سہولیات کیلئے سرکاری عملہ دستیاب رہے اس مشن کو گزشتہ دسہرہ کے موقع پر جگتیال کو تشکیل نو ضلع انجام پایا ۔ ایک سال کی کامیابی کے ساتھ تکمیل پر ضلع بھر میں تمام محکمہ جات بلدیہ حدود ، گرام پنچایت ، میں موجود سرکاری آفسران کی خدمات ناقابل فراموش ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جگتیال ضلع میں ترقیاتی کاموں کیلئے ریاستی حکومت کے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اور مقامی ایم ایل اے ٹی جیون ریڈی ، رکن پارلیمنٹ کے کویتا کی عوام کیلئے ہر وقت فکر مند رہے ۔ انہوں نے کہا کہ جگتیال ضلع کو ملک بھر میں ریاست تلنگانہ میں اول مقام سوچھ بھارت ، رینکنگ میں پہلے مقام پر آیا ہے ۔ 100% فیصد بیت الخلاؤں کی تعمیر 90 دن میں 59,696 بیت الخلائیں تعمیر کئے ۔ سوچھ بھارت سوچھ مشن میں حصہ لینے والے ضلع بھر کے سرکاری آفسران ،سیاسی قائدین اور سرکاری ملازمین اور کسانوں کی مدد سے جگتیال ضلع کو یہ مقام حاصل ہوا ہے ۔ سوچھ ضلع کی نشاندہی کیلئے ملک بھر میں اول مقام حاصل ہونے پر جگتیال ضلع کی عوام کا اہم کردار ہے ۔ اسی طرح جگتیال ریاست بھر میں نمایاں مقام حاصل کیا ہے ۔ ملک بھر میں چھتیس گڑھ ، بھاگیشورم ، تلنگانہ بھر میں رینکنگ میں پہلا مقام حاصل کیا ہے ۔ جگتیال ضلع قائم ہونے کے بعد ہر فلاحی کام میں ہر ترقیاتی کام میں ہر سرکاری اسکیموں کو روبہ عمل میں لانے کیلئے ہر لحاظ سے سو فیصد کام کئے ضلع میں ترقی کیلئے عوام انفرادی بیت الخلائیں تعمیر کروانے کیلئے 18 منڈلوں میں تین میونسپل ہیں اور دیگر شہروں میں عوام آگے آئی ہے ۔ 18 منڈلوں میں 7,75,047 عوام ہے جس میں 2,05,135 مکانات ہے ۔ 2016 ء مارچ 31 تک 1,45,439 مکانوں کو بیت الخلائیں ہیں ۔ لیکن 59,0696 مکانوں کو بیت الخلائیں نہیں تھے ۔ 100 فیصد تعمیر کئے گئے ۔ 2016ء ڈسمبر میں 38 گھنٹوں میں چھ گاؤں میں 820 بیت الخلائیں تعمیر کروائے گئے۔ چھ گاؤں میں تمام چیزوں کیلئے گرام پنچایت آفسران ایم پی ڈی اوز ، تحصیلدار ، دن و رات محنت کئے ہیں ۔ اسی طرح کسانوں کیلئے دھان کے تھیلے ایک کروڑ سربراہ کئے گئے تشکیل نو ضلع کے بعد جگتیال ضلع میں ایس آر ایس پی کنال کے ذریعہ آخری سرحدی علاقوں تک عوام کو پانی کی سربراہی کی گئی جس کے نتیجہ میں دھان کی پیداوار میں اضافہ ہوا دھان کی منتقلی کیلئے کسانوں کو سہولت پہنچانے کیلئے جوائنٹ کلکٹر مشرف علی فاروقی کو بیسٹ آفیسر کیلئے ریاست بھر میں منتخب کیا گیا ۔ گزشتہ روز وزیر فینانس ایٹالہ راجندر کے ہاتھوں توصیف نامہ دیا گیا ۔ اسی طرح ضلع بھر میں جگتیال آر ڈی او جی نریندر اور تحصیلداروں نے دن و رات کسانوں کیلئے اپنا قیمتی وقت لگایا ہے ۔ کسانوں کیلئے دھان کی منتقلی کروڑوں کے روپئے سے ریاستی حکومت خرچ کی ہے ۔ مجموعی طور پر جگتیال ضلع تمام سرکاری کاموں میں ایک سال میں سرفہرست ہے ۔ گزشتہ سالانہ امتحانات ایس ایس سی کے نتائج ریاست بھر میں جگتیال کو اول مقام حاصل ہوا ہے ۔ اسی طرح سرکاری دواخانوں میں متحدہ کریم نگر ضلع میں عوام 25 فیصد حاملہ خواتین استفادہ کیا کرتی تھی ۔ تشکیل نو ضلع کے بعد 60 فیصد حاملہ خواتین استفادہ کررہی ہے ۔ ریاستی حکومت کے سی آرکٹ کے ساتھ ساتھ مالی امداد کی جارہی ہے ۔ اسی طرح غریب عوام کیلئے زمین بدلی ، زمین بندی پروگرام کئے گئے اور سادہ بیع نامہ کے تحت ہزاروں افراد کو پٹہ جات دیئے گئے ۔ پہانیوں میں ناموں کا اندراج کیا گیا اور پرجاوانی پروگرام کے ذریعہ عوامی مسائل حل کئے گئے ۔ ایس سی ، ایس ٹی ، بی سی میناریٹی کیلئے فلاحی اسکیموں کو پہنچایا گیا ۔ اسی طرح شادی مبارک ، کلیانالکشمی کے ذریعہ غریب لڑکیوں کو ریاستی حکومت فی کس 75 ہزار روپئے امداد کررہی ہے ۔ جگتیال ضلع سوفیصد آگے رہا ، میناریٹیز کیلئے اقلیتی اقامتی اسکولس قائم کئے گئے ۔ انگلش میڈیم اسکول کا قیام سے 960 طلباء و طالبات بہترین انداز میں تعلیم حاصل کررہے ہیں قابل فخر ہے ۔ دوسرے سال میں تمام سرکاری و خانگی کاموں میں عوام خوشحال رہیں ۔ سرکاری اسکیمات سے استفادہ کریں اور کہا کہ جگتیال کی ترقی کیلئے سیاسی طور پر ہمیشہ فکر مند رہنے والے وزیر فینانس ایٹالہ راجندر ، کوپولہ ایشور گورنمنٹ وہیپ ، ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی ، وزیر محکمہ مال، رکن پارلیمنٹ کے کویتا ، رکن اسمبلی جگتیال ٹی جیون ریڈی ، رکن اسمبلی کورٹلہ ویدیا ساگر راؤ ، رکن اسمبلی چپاڈنڈی ، بی شوبھا کا اظہار تشکر کیا ۔ اس موقع پر مشرف علی فاروقی جوائنٹ کلکٹر ، ارونا شری PDDRDA آفیسر کے علاوہ ضلع بھر کے ایم پی ڈی اوز اور دیگر موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT