Monday , June 25 2018
Home / شہر کی خبریں / علاقوں کی نشاندہی کیلئے عہدیداروں کو ہدایت، کمشنر بلدیہ کا جائزہ اجلاس

علاقوں کی نشاندہی کیلئے عہدیداروں کو ہدایت، کمشنر بلدیہ کا جائزہ اجلاس

بلدیہ کے ہر سرکل سے دو سلم بستیوں کی ترقی

بلدیہ کے ہر سرکل سے دو سلم بستیوں کی ترقی
حیدرآباد 18 ڈسمبر (سیاست نیوز) اسپیشل آفیسر و کمشنر مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد نے آج ایک اور جائزہ اجلاس منعقد کرتے ہوئے بلدی حدود میں موجود ہر سرکل کے دو سلم علاقوں کا انتخاب کرنے کی عہدیداروں کو ہدایت دی۔ مسٹر سومیش کمار نے عہدیداروں کو ہدایت جاری کرتے ہوئے کہاکہ وہ شہر حیدرآباد کو سلم سے پاک شہر بنانے کے منصوبہ کے تحت ہر سرکل میں موجود دو سلم علاقوں کی نشاندہی کرتے ہوئے رپورٹ پیش کریں تاکہ اُن سلم علاقوں میں موجود خاندانوں کو دو کمروں پر مشتمل فلیٹ تعمیر کرتے ہوئے حوالے کیا جاسکے۔ مسٹر سومیش کمار نے اجلاس کے دوران بتایا کہ حکومت کی اعانت سے مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد شہر کو سلم سے پاک بنانے کے لئے نہ صرف ملٹی اسٹوری عمارتوں کی تعمیر کا منصوبہ رکھتی ہے بلکہ اِس کے علاوہ بھی دیگر اُمور پر غور کیا جارہا ہے۔ اُنھوں نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ بلدیہ کی حکمت عملی کی تیاری میں معاونت کریں تاکہ شہر کو سلم سے پاک بنایا جاسکے۔ اسپیشل آفیسر مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد نے دعویٰ کیاکہ حیدرآباد بلدی دفتر واحد ایسا دفتر ہے جہاں پر تمام شعبہ جات بحسن خوبی خدمات انجام دے رہے ہیں۔ انھوں نے اس بات پر مسرت کا اظہار کیاکہ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد آن لائن شکایات کی وصولی کے علاوہ عوامی سہولیات کی فراہمی میں سب سے آگے رہنے کو ترجیح دیئے ہوئے ہے۔

مسٹر سومیش کمار نے بتایا کہ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے شہر حیدرآباد کے حدود میں رہنے والے تمام افراد خاندانوں کو ہرممکنہ سہولت کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے گا اور عوام کو سہولتوں کی فراہمی کے ساتھ ساتھ اُن میں شعور اُجاگر کرنے کے اقدامات کئے جائیں گے۔ جائزہ اجلاس کے دوران مسٹر سومیش کمار نے 4 ہزار زیرالتواء فائیلوں کا جائزہ لیا اور اجلاس میں موجود اپنے ماتحتین کو ہدایت جاری کی ہے کہ وہ زیرالتواء فائیلوں کی عاجلانہ یکسوئی کو یقینی بنائیں۔ اُنھوں نے مکانات کی تعمیر کے لئے طلب کردہ اجازت ناموں کے علاوہ قبضہ کے اسناد کے حصول کو اندرون 24 یوم یکسوئی کرتے ہوئے حوالے کرنے کی ہدایت دی۔ مسٹر سومیش کمار نے جی ایچ ایم سی میں ای گورننس خدمات کو فروغ دینے کے اقدامات کا اشارہ دیتے ہوئے عہدیداروں کو مشورہ دیا کہ وہ زیادہ سے زیادہ آن لائن کام کو انجام دینے کی کوشش کریں تاکہ عوام بغیر کسی درمیانی شخص کے خدمات کے حصول کے لئے رجوع ہوسکیں۔

TOPPOPULARRECENT