Wednesday , November 22 2017
Home / ہندوستان / علحدگی پسندوں کی ہڑتال، عام زندگی درہم برہم

علحدگی پسندوں کی ہڑتال، عام زندگی درہم برہم

1947ء میں وادی میں ہندوستانی فوج کی تعیناتی
سرینگر ۔ 27 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) وادی کشمیر میں علحدگی پسندوں نے 1947ء میں آج ہی کے دن فوج کی تعیناتی کے خلاف بطور احتجاج ہڑتال منائی جس کی وجہ سے عام زندگی درہم برہم ہو گئی۔ عہدیداروں نے بتایا کہ دکانات اور دیگر تجارتی ادارے جیسے پٹرول پمپس، خانگی دفاتر بند رہے۔ سڑکوں پر ٹریفک بھی کافی کم دکھائی دے رہی تھی۔ سرکاری دفاتر اور بینکوں میں حاضری معمول سے کم رہی کیونکہ ٹرانسپورٹ خدمات انہیں فراہم نہیں تھیں۔ تعلیمی ادارے بھی بند رہے اور کشمیر یونیورسٹی نے آج ہونے والے امتحانات ملتوی کردیئے۔ وادی میں دیگر ضلع ہیڈکوارٹرس میں بند کی اطلاعات ہیں۔ واضح رہے کہ 27 اکٹوبر 1947ء کو کشمیر میں فوج تعینات کی گئی تھی اور اس نے پاکستان سے قبائیلی حملہ آوروں کے خلاف بڑی کارروائی شروع کی۔ اس سے ایک دن قبل اس وقت کے مہاراجہ جموں و کشمیر ہری سنگھ نے یونین آف انڈیا میں شمولیت کے معاہدے پر دستخط کئے تھے۔ علحدگی پسندوں نے فوج اتارے جانے کے خلاف آج بطور احتجاج ہڑتال منائی۔ ریاست میں 1989ء میں عسکریت پسندی شروع ہونے کے بعد ہر سال اس دن علحدگی پسند تنظیمیں ہڑتال کیا کرتی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT