Sunday , April 22 2018
Home / شہر کی خبریں / علم فقہہ کا سیکھنا ہر مسلمان پر فرض عین ، ولیمہ تقریب میں غرباء کو شامل کریں

علم فقہہ کا سیکھنا ہر مسلمان پر فرض عین ، ولیمہ تقریب میں غرباء کو شامل کریں

کلیۃ البنین میں علمی مذاکرہ ، چیرمین تلنگانہ اقلیتی مالیاتی کارپوریشن سید اکبر حسین کا خطاب
حیدرآباد ۔ /14 فبروری (راست) جناب سید اکبر حسین صدرنشین اقلیتی مالیتی کارپوریشن تلنگانہ اسٹیٹ نے کلیۃ البنین جامعۃ المؤمنات مغلپورہ میں منعقدہ ایک روزہ فقہی مذاکرہ کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ علم فقہ کا سیکھنا ہر مسلمان پر فرض عین ہے ۔ اگرچہ عالم، فاضل ، و حافظ بننا فرض کفایہ ہے، اللہ تعالیٰ جس کے ساتھ خیر کا ارادہ رکھتا ہے ۔ اس کو دین کی سمجھ عطا کرتا ہے ، آج طلباء کلیۃ البنین جامعۃ المؤمنات نے عقائد ، وضو ، نماز ، زکوٰۃ ، بیع ، شرع ، نکاح ، طلاق ثلاثہ ، سود عیادت مریض ، دعوت ولیمہ ، بنک انٹرسٹ انشورنس وغیرہ موضوعات پر بہت ہی دلچسپ انداز میں مسائل کو بیان کیا ہے جس کے سیکھنے اور جاننے سے ہماری عبادات و معاملات درست ہوتے ہیں ، مذاکرہ کاآغاز قاری محسن کی قرأت ، حافظ محمد جعفر کی نعت شریف سے ہوا ۔ نظامت کے فرائض حافظ محمد نے انجام دیئے ۔ ڈاکٹر مفتی حافظ محمد مستان علی قادری ناظم اعلیٰ جامعۃ المؤمنات نے خیرمقدمی کلمات ادا کئے ۔ مذاکرہ میں بحیثیت مہمانان خصوصی ڈاکٹر سید یوسف الدین بغدادی ، ڈاکٹر حافظ محمد صابر پاشاہ قادری ، مولانا صلاح الدین قادری ، جناب ابرار آزاد ، مولانا ذاکر حسین ، الحاج محمد معیز چودھری ، جناب شمس الدین فاروقی ، الحاج رحیم اللہ خاں نیازی ، مولانا ریاض احمد اشرفی ، مولانا محمد شہباز ، مفتی عبدالرحیم قادری شرکت کی ۔ اس موقع پر کلیۃ البنین کے اساتذہ و طلباء جدید و قدیم مسائل فقہیہ سوالات و جوابات کی روشنی میں فقہی مذاکرہ پیش کئے ۔ حافظ محمد غوث عادل و قاری شیخ مظہر نے کہا کہ وہ ولیمہ ، ولیمہ نہیں ہے جس میں غرباء کو شامل نہ کیا گیا ہو ۔ قادر محی الدین اور مولوی عابد صابری نے کہا کہ جب کسی شخص کا انتقال ہوجائے تو نوحہ خوانی نہ کریں بلکہ سنت طریقے سے میت کو قبلہ رخ لٹائیں اور اسلامی احکامات کے مطابق اس کی تجہیز و تکفین کریں ۔ حافظ عمران و حافظ محمد مظہر نے اپنے ساتھیوں کے ساتھ مذاکرہ میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ نکاح اور ولیمہ سنت تقریب پر ناچ گانا آتشبازی دیگر غلط رسومات سے اجتناب کا مشورہ دیا ۔ اس مذاکرہ میں حافظ ابراہیم ، حافظ شریف ، حافظ اعظم ، حافظ عظیم ، قاری انس ، قاری عمر علی شاہ ، قاری مجاہد ، قاری طاہر ، حافظ ایاز ، حافظ مسعود محمد ناصر ، حافظ عبدالعلیم ، محمد مصطفی ، حافظ مرزا غلام علی بیگ ،محمد برہان الدین ، سید قدیر نے حصہ لئے اس فقہی مذاکرہ کا اختتام ڈاکٹر مفتی محمد کاظم حسین نقشبندی کی دعاء پر ہوا ۔

TOPPOPULARRECENT