Monday , July 16 2018
Home / ہندوستان / علیگڑھ مسلم یونیورسٹی جناح تصویر تنازعہ

علیگڑھ مسلم یونیورسٹی جناح تصویر تنازعہ

سابق نائب صدر محمد حامد انصاری پر بی جے پی رکن پارلیمنٹ کی تنقید

وڈودرہ (گجرات) 14 مئی (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی رکن پارلیمنٹ ستیش کمار گوتم جس نے یہ مطالبہ کرتے ہوئے کہ بانی پاکستان محمد علی جناح کی تصویر علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی دیوار سے نکال دی جائے۔ سابق نائب صدرجمہوریہ ہند محمد حامد انصاری کو مبینہ طور پر اِس مسئلہ پر ایک طالب علم کی تائید کرنے پر تنقید کا نشانہ بنایا۔ حامد انصاری نے طالب علم آنند کی کارروائی کی تائید کی تھی جس کے بموجب طالب علم نے کہا تھا کہ 2 مئی کو یونیورسٹی کے احاطہ میں تصویر کے تنازعہ کے سلسلہ میں ایک ہنگامہ کھڑا کردیا تھا جبکہ انھیں علیگڑھ مسلم یونیورسٹی طلبہ یونین کی تاحیات رکنیت عطا کی گئی تھی۔ محمد حامد انصاری کی تقریب منسوخ کردی گئی کیوں کہ پرتشدد احتجاج جن کی قیادت مبینہ طور پر انتہا پسند دائیں بازو کی ہندو تنظیموں کے کارکن کررہے تھے اور اُن کا مطالبہ تھا کہ مسلم لیگ قائد اور بانی پاکستان کی تصویر یونیورسٹی کی دیوار سے علیحدہ کردی جائے۔ محمد حامد انصاری نے ملک کے نائب صدر کا اہم عہدہ سنبھالا تھا، اُنھیں چاہئے تھا کہ طلبہ کی تائید اور اِس قسم کا بیان جاری کرنے سے گریز کرتے۔ بی جے پی رکن پارلیمنٹ گوتم نے خبررساں ادارہ سے آج ٹیلی فونپر بات چیت کرتے ہوئے یہ تبصرہ کیا۔ سابق نائب صدر اور سفارت کار جنھوں نے علیگڑھ مسلم یونیورسٹی سے تعلیم حاصل کی ہے، اِس خلل اندازی کا سامنا کررہے تھے حالانکہ درست وقت پر اُنھوں نے اعتراف کیا تھا اور اپنے اعتراض کے جواز میں ایک اچھا بہانہ تلاش کیا تھا۔ اُنھوں نے کہاکہ طلبہ کا پرامن احتجاج قابل ستائش ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ بعض گروپس تصویر کی علیحدگی کا مطالبہ کررہے ہیں جو علیگڑھ مسلم یونیورسٹی کی دیوار پر آویزاں ہے اور اُن کے احتجاج کے نتیجہ میں 2 مئی کو یونیورسٹی کے احاطہ میں جھڑپیں ہوگئیں۔ علیگڑھ مسلم یونیورسٹی کی لوک سبھا میں نمائندگی کرنے والے رکن پارلیمنٹ ایک خانگی تقریب میں شرکت کے لئے یہاں آئے ہوئے تھے۔ اُنھوں نے کہا کہ اُنھوں نے ایک مکتوب یونیورسٹی کے وائس چانسلر طارق منصور کو روانہ کیا ہے اور اُن سے وضاحت طلب کی ہے کہ جناح کی تصویر طلبہ یونین کے دفتر کی دیوار پر کیوں واضح کی گئی ہے۔ اُنھوں نے تحریر کیاکہ اِس علاقہ کے منتخبہ رکن پارلیمنٹ کی حیثیت سے اُن کا فرض تھا کہ وائس چانسلر کو مکتوب تحریر کرتے اور تصویر کی علیحدگی کا مطالبہ کرتے۔

TOPPOPULARRECENT