Friday , January 19 2018
Home / ہندوستان / علیگڑھ مسلم یونیورسٹی لائبریری تنازعہ

علیگڑھ مسلم یونیورسٹی لائبریری تنازعہ

علیگڑھ ۔ 12 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) علیگڑھ مسلم یونیورسٹی ویمنس کالج اسٹوڈنٹس یونین اور علیگڑھ مسلم یونیورسٹی اسٹوڈنٹس یونین نے آج مشترکہ طور پر یونیورسٹی لائبریری میں طالبات کی رسائی کے مسئلہ پر میڈیا کی مبینہ طور پر جانبدارانہ رپورٹ کے خلاف مشترکہ احتجاج کیا۔ 2000 سے زائد طالبات نے احتجاجی جلوس نکالا جو سرسید چوراہا پر اختتام کو پہن

علیگڑھ ۔ 12 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) علیگڑھ مسلم یونیورسٹی ویمنس کالج اسٹوڈنٹس یونین اور علیگڑھ مسلم یونیورسٹی اسٹوڈنٹس یونین نے آج مشترکہ طور پر یونیورسٹی لائبریری میں طالبات کی رسائی کے مسئلہ پر میڈیا کی مبینہ طور پر جانبدارانہ رپورٹ کے خلاف مشترکہ احتجاج کیا۔ 2000 سے زائد طالبات نے احتجاجی جلوس نکالا جو سرسید چوراہا پر اختتام کو پہنچا۔ نومنتخب صدر یونین گل فضا خان نے احتجاجیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میڈیا نے مولانا آزاد لائبریری تک رسائی کیلئے ہمارے مطالبات کو جس منفی انداز میں پیش کیا ہے اس پر ہم کافی برہم ہے۔ انہوں نے کہا کہ میڈیا میں موجود بعض گمراہ کن عناصر ہمارے مطالبہ کو انتہائی غلط انداز میں پیش کرنے کی کوشش کررہے ہیں اور یہ ہمارے لئے تکلیف دہ ہے۔ بعدازاں احتجاجیوں نے سرکردہ انگریزی روزنامہ کا علامتی پتلا نذرآتش کیا جس نے یہ گمراہ کن خبر پھیلائی تھی۔ نومنتخب اسٹوڈنٹس یونین نے بھی اسی نوعیت کا علحدہ احتجاج منعقد کیا۔ ان دونوں یونین نے مشترکہ صحافتی اعلامیہ جاری کرتے ہوئے کہا کہ علیگڑھ مسلم یونیورسٹی میں تمام انڈر گریجویٹ، پوسٹ گریجویٹ اور ریسرچ کورسیس کی طالبات کو بناء کی تحدیدات کے داخلہ کی پہلے سے اجازت ہے۔ ہم نے وزارت فروغ انسانی وسائل سے یہ مطالبہ کیا تھا کہ زائد فنڈس فراہم کئے جانے چاہئے تاکہ ویمنس کالج لائبریری جو یونیورسٹی کیمپس سے کافی دور ہے، اسے ایسی جگہ رکھا جائے جہاں ویمنس کالج کی انڈر گریجویٹ طالبات کو مشکلات پیش نہ آئے اور ان کی ضروریات پوری ہوسکے۔

TOPPOPULARRECENT