Tuesday , November 21 2017
Home / ہندوستان / علیگڑھ مسلم یونیورسٹی کو دہشت کی نرسری سے تعبیر کرنے پر احتجاج

علیگڑھ مسلم یونیورسٹی کو دہشت کی نرسری سے تعبیر کرنے پر احتجاج

ہندو یووا واہنی لیڈروں کے اشتعال انگیز بیان پر پولیس میں کیس درج
علیگڑھ 19 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) علیگڑھ مسلم یونیورسٹی حکام کی شکایت پر ہندو یوا واہنی کے تنظیمی عہدیداروں کے خلاف ایک کیس درج کرلیا گیا جبکہ دائیں بازو کی تنظیم نے یونیورسٹی کو ’’دہشت کی نرسری‘ قرار دیا تھا۔ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ ادویش تیواری نے بتایا کہ ہندو یوا واہنی کے ریاستی صدر اور دیگر 3 لیڈروں کے خلاف مذہبی جذبات مجروح اور امن عامہ کے لئے خطرہ پیدا کرنے کے الزام میں کیس درج کرلیا گیا ہے۔ انھوں نے بتایا کہ علیگڑھ مسلم یونیورسٹی حکام نے یہ شکایت درج کروائی ہے کہ ہندو واہنی لیڈروں نے عمداً فرقہ وارانہ بیان جاری کرتے ہوئے یونویرسٹی طلباء میں اضطراب پیدا کردیا ہے۔ یونیورسٹی کے ترجمان راحت ابرار نے اپنی شکایت میں یہ الزام عائد کیاکہ چہارشنبہ کے دن منعقدہ ایک پریس کانفرنس میں واہنی لیڈروں نے اے ایم یو کو ’دہشت کی نرسری‘ سے تعبیر کیا تھا اور انتہائی قابل اعتراض اور اشتعال انگیز الزام عائد کیا گیا ہے کہ اے ایم یو کے طلباء عسکریت پسند تنظیم اسلامک اسٹیٹ کے ساتھ ربط ضبط میں ہیں۔

TOPPOPULARRECENT