Wednesday , June 20 2018
Home / Top Stories / علیگڑھ میں امام مسجد کو زندہ جلانے کی کوشش

علیگڑھ میں امام مسجد کو زندہ جلانے کی کوشش

ہندو اور مسلمانوں نے بروقت بچالیا ، اشرار کے خلاف مقدمہ
علیگڑھ ۔ /9 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) راجستھان میں ایک مسلم نوجوان کو مبینہ ’’لوجہاد‘‘ کے نام ایک جنونی کے ہاتھوں بری طرح زدوکوب کرتے ہوئے ہلاک کرنے اور جلائے جانے کے دو دن بعد آج علیگڑھ کی جامع مسجد کے ایک امام کو زندہ جلانے کی کوشش کی گئی ۔ اترپردیش کے ضلع علیگڑھ کے جٹاری ٹاؤن میں پولیس اسٹیشن سے بمشکل 30 میٹر دور واقع جامع مسجد میں 10.30 بجے دن یہ واقعہ پیش آیا ۔ تفصیلات کے مطابق جامع مسجد کے امام محمد سبیب رضا نے اپنے کمرہ کے قریب کوئی آواز سنی تھی اور جیسے ہی وہ کچھ دیکھنے کیلئے کمرہ کے اندر گئے اشرار نے دروازہ کو باہر سے بند کردیا اور انہیں زندہ جلانے کی کوشش کے طور پر اندر پٹرول چھڑک کر کھڑکی کے ذریعہ ماچس کی جلتی ہوئی تیلی کمرہ میں پھینک دی ۔ اس صورتحال سے خوفزدہ امام نے موبائیل فون پر پڑوسیوں کو اطلاع دی ۔ ہندو اور مسلم دونوں طبقات کے افراد وہاںپہونچ گئے اور انہیں بروقت بچالیا ۔ لیکن ان کے کمرہ میں موجود بستر ، کپڑے اور ، کتابیں ، خاکستر ہوگئے ۔ پولیس نے نامعلوم اشرار کے خلاف ہندوستانی تعزیری دفعات 436 ، 326 (اے) اور 295 (اے) کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے ۔ بیان کیا جاتا ہے کہ 29 سالہ سبیب رضا بہار کے ضلع پورنیہ کے ساکن ہیں ۔ ایک سال قبل سے وہ اس مسجد میں امامت کررہے ہیں ۔ اس علاقہ میں ان کا کسی سے کوئی جھگڑا نہیں ہے ۔

TOPPOPULARRECENT