Friday , September 21 2018
Home / سیاسیات / عوامی تشخص کے تحفظ کا فاروق عبداللہ کا عہد

عوامی تشخص کے تحفظ کا فاروق عبداللہ کا عہد

سرینگر ۔ 12 جون (سیاست ڈاٹ کام) صدر نیشنل کانفرنس فاروق عبداللہ نے الزام عائد کیا کہ ریاست جموں و کشمیر کی آبادیاتی خصوصیت تبدیل کرنے کی ’’سازش‘‘ جاری ہے لیکن کہا کہ ان کی پارٹی عوام کے تشخص کا ’’تحفظ کرنے‘‘ جدوجہد کرے گی۔ فاروق عبداللہ نے کہا کہ مفادات حاصلہ جو طویل عرصہ سے کشمیری تشخص اور کشمیری قومیت کی ریڑھ کی ہڈی توڑدینے کی

سرینگر ۔ 12 جون (سیاست ڈاٹ کام) صدر نیشنل کانفرنس فاروق عبداللہ نے الزام عائد کیا کہ ریاست جموں و کشمیر کی آبادیاتی خصوصیت تبدیل کرنے کی ’’سازش‘‘ جاری ہے لیکن کہا کہ ان کی پارٹی عوام کے تشخص کا ’’تحفظ کرنے‘‘ جدوجہد کرے گی۔ فاروق عبداللہ نے کہا کہ مفادات حاصلہ جو طویل عرصہ سے کشمیری تشخص اور کشمیری قومیت کی ریڑھ کی ہڈی توڑدینے کی خواہش رکھتے ہیں، نیشنل کانفرنس کے خلاف جنگ چھیڑنے کیلئے متحد ہوگئے ہیں۔ فاروق عبداللہ نے جو نامور پارٹی قائدین مرزا محمد افضل بیگ اور غلام محی الدین شاہ کی برسی کے موقع پر پارٹی ہیڈکوارٹرس میں تقریر کررہے تھے۔ پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) پر درپردہ تنقید کرتے ہوئے کہا کہ فاروق عبداللہ اور نیشنل کانفرنس عوام کی آرزوؤں کا تحفظ کرے گی اور جب بھی انہیں ’’مگرمچھ کے آنسو‘‘ بہانے والوں کا سامنا ہوگا عوام ان کا مقابلہ کریں گے۔ ان افراد نے دستور کی دفعہ 370 برخاست کرنے کیلئے بہت بڑی سازش کی ہے۔ حالیہ لوک سبھا انتخابات میں پارٹی کے ناقص مظاہرہ کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جو لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ انتخابی ناکامی سے ہمارا جوش و جذبہ سرد پڑ جائے گا انہیں تاریخ کے اوراق کا جائزہ لینا چاہئے۔ انہوںنے کہا کہ یہ سمجھنا بیوقوفی ہوگی کہ اب ہمارا جوش و جذبہ سرد پڑ گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم خاکستر سے دوبارہ پیدا ہوں گے اور واپسی کی شاندار تاریخ تحریر کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT