Saturday , September 22 2018
Home / شہر کی خبریں / عوامی شعبہ کی بینکوں کو خانگیانہ مسئلہ کا حل نہیں

عوامی شعبہ کی بینکوں کو خانگیانہ مسئلہ کا حل نہیں

موثر کارکردگی کیلئے آزادانہ ماحول اور اختیارات پر زور

حیدرآباد ۔ 26 مارچ ( پی ٹی آئی ) ملک کے چند سرکردہ صنعتی ماہرین کے مطابق عوامی شعبہ کی بینکوں کو خانگیانہ اس شعبہ کے موجودہ مسائل کا حل نہیں ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ عوامی شعبہ کی بینکوں کو سیاسی مداخلت سے آزاد ماحول میں موثر طریقہ سے کام کرنے کی آزادی کے ساتھ بااختیار بورڈس کی ضرورت ہے ۔ انفورسیس کے سابق چیف فینانشیل آفیسر وی بالا کرشنن نے کہا کہ عالمی ٹرسٹ بینک ایک خانگی بینک تھا جو عوامی شعبہ کے بینکوں کی کارکردگی اور انہیں خانگیانہ کی بحث کے درمیان ناکام ہوگیا تھا ۔ بالا کرشنن نے مزید کہا کہ ’’ علاوہ ازیں ایک ایسے ملک میں جہاں آبادی کا ایک ناقابل لحاظ حصہ ہنوز بینکوں سے دور ہے آپ کو ان کی رہنمائی میں اضافہ اور مقاصد کی تکمیل کیلئے عوامی شعبہ کی بینکوں کی ضرورت ہے ‘‘ ۔ بالا کرشنن نے کہا کہ ہندوستان میں بچتوں کی شرح بھی بہت زیادہ اور عوامی شعبہ کی بینکس بچت کرنے والے کھاتہ داروں کو مطلوب تحفظ اور اطمینان فراہم کرسکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ’’ بینکوں کو سیاسی مداخلت سے مکمل طور پر آماد کیا جانا چاہیئے ‘‘ ۔

TOPPOPULARRECENT