Monday , September 24 2018
Home / شہر کی خبریں / عوامی مسائل پر تبادلہ خیال کے لیے کل جماعتی اجلاس طلب کرنے کا مطالبہ

عوامی مسائل پر تبادلہ خیال کے لیے کل جماعتی اجلاس طلب کرنے کا مطالبہ

برسر اقتدار ٹی آرایس کے ماقبل انتخابات بلند بانگ دعوے ، عملی کام ندارد ، تلنگانہ سی پی آئی

برسر اقتدار ٹی آرایس کے ماقبل انتخابات بلند بانگ دعوے ، عملی کام ندارد ، تلنگانہ سی پی آئی
حیدرآباد ۔ 3 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ ریاستی سی پی آئی کمیٹی نے عوام کو درپیش مختلف مسائل پر تفصیلی تبادلہ خیال کرنے فی الفور کل جماعتی اجلاس طلب کرنے کا چیف منسٹر حکومت تلنگانہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے پر زور مطالبہ کیا اور کہا کہ جدوجہد تنظیم سے سیاسی پارٹی میں تبدیل ہونے والی تلنگانہ راشٹرا سمیتی کی زیر قیادت تلنگانہ حکومت نے انتخابات کے موقعہ پر بہت کچھ بلند بانگ دعوے و وعدے کی تھی لیکن حکومت تشکیل دیتے ہوئے ایک ماہ گزر جانے کے باوجود تلنگانہ میں حکومت کی موجودگی کا بھی عوام میں کوئی احساس نہیں پایا جارہا ہے ۔ لہذا حکومت کی موجودگی کا عوام میں احساس دلانے اور حکومت کی کارکردگی سے متعلق عوام کو واقف کروانے کے لیے کل جماعتی اجلاس کا انعقاد کافی ممد و مددگار ثابت ہوگا ۔ آج یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر مخدوم بھون میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے سکریٹری تلنگانہ سی پی آئی کمیٹی مسٹر سی ایچ وینکٹ ریڈی نے اس بات کا انکشاف کیا اور فی الفور کل جماعتی اجلاس منعقد کرنے کا مسٹر کے چندر شیکھر راو کو مشورہ دیا ۔ اور کہا کہ تلنگانہ ریاست کی ہمہ جہتی ترقی کو یقینی بنانے پر کسی سیاسی پارٹی جدوجہد میں حصہ لیتے ہوئے مختلف تنظیموں اور یونینوں سے بھی مسٹر کے چندر شیکھر راو کو مشورہ لینے اور موثر و مثبت اقدامات کرنے کی اشد ضرورت ہے ۔ انہوں نے چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی طرز کارکردگی پر اپنی بالواسطہ سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی طرز کارکردگی سے کوئی بھی تلنگانہ عوام مطمئن نہیں ہیں ۔ مسٹر وینکٹ ریڈی نے کہا کہ چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کا ( کانسپٹ ) نظریہ بہت اچھا ہے ۔ لیکن عمل نہیں دکھائی دے رہا ہے ۔ سکریٹری تلنگانہ سی پی آئی کمیٹی نے غریب عوام میں اراضیات کی تقسیم عمل میں لانے کے لیے کونیرو رنگاراؤ کمیٹی رپورٹ کا جائزہ لے کر اس رپورٹ کی سفارشات پر عمل آوری کو یقینی بنانے کا مشورہ دیا ۔ انہوں نے گروکل ٹرسٹ اراضی کے تعلق سے حکومت تلنگانہ کے اقدامات قابل ستائش ضرور ہیں لیکن وہاں پر غریب عوام کا بھی پاس و لحاظ کیا جانا چاہئے ۔ علاوہ ازیں ضلع حیدرآباد اور رنگاریڈی میں بھی بڑے پیمانے پر اراضیات پر غیر مجاز قبضے کرلیے گئے ۔ ان تمام اراضیات کی تفصیلات اکھٹا کر کے ان اراضیات پر سے غیر مجاز قبضوں کو برخاست کروانے کے لیے بھی موثر اقدامات کرنے کا چندر شیکھر راؤ کو مشورہ دیا ۔ طلباء کے لیے فیس ری ایمبرسمنٹ کے مسئلہ پر پائے جانے والے تجسس و تشویش پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس سلسلہ میں ہر ایک کے لیے قابل قبول راستہ تلاش کر کے فیس ری ایمبرسمنٹ اسکیم پر عمل آوری کرنے کی پر زور خواہش کی ۔ اس موقعہ پر اسسٹنٹ سکریٹری تلنگانہ سی پی آئی کمیٹی مسٹر پی وینکٹ ریڈی بھی موجود تھے ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT