Tuesday , November 21 2017
Home / اضلاع کی خبریں / عوامی مسائل کی یکسوئی میں حکومت یکسر ناکام

عوامی مسائل کی یکسوئی میں حکومت یکسر ناکام

نظام آباد:19 ؍ اپریل (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز )کل ہند کانگریس کے ترجمان و سابق رکن پارلیمنٹ مدھوگوڑ یاشکی نے ٹی آرایس پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ٹی آرایس قائدین اور حکومت بیڑی کٹے پر سے کھوپڑی کا نشان 85 فیصد کی برخواستگی کے نمائندگی میں ناکام ہوئے ہیں انہوں نے کہا کہ لاکھوں افراد بیڑی صنعت پر منحصر ہے اور مرکزی حکومت بیڑی کٹے پر 85 فیصد کھوپڑی کے نشان کو پرنٹ کرنے کے جی او کو جاری کیا ہے جس کی وجہ سے بیڑی صنعت پر اس کا زبردست اثر ہوا ہے اور لاکھوں افراد ملازمت سے ہاتھ دھونے کے امکانات ہیں۔ اس مسئلہ پر مرکزی حکومت سے ٹی آرایس حکومت نمائندگی کرنے میں ناکام ہوئی ہے۔ سابق میں بھی حکومت اس نشان کے پرنٹ کیلئے منصوبہ بند تھے اور اس وقت ارکان پارلیمنٹ میں موجودہ صدر جمہوریہ کے ہمراہ حکومت پر اس کا دبائو ڈالا گیا تھا لیکن اراکین پارلیمنٹ اس خصوص میں ناکام رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ خلیج کے متاثرین کی باز آبادکاری میں حکومت ناکام ہوئی ہے۔ خلیج کے متاثرین کے مسئلہ پر زبانی ہمدردی جتائی جارہی ہے عملی طور پر کوئی اقدام نہ کرنے کی وجہ سے سینکڑوں متاثرین مشکلوں سے دوچار ہے۔ مدھوگوڑ یاشکی نے کہا کہ نظام آباد ضلع میں شدید گرمی چل رہی ہے اور پانی کے مسائل پیدا ہورہے ہیںاور چیف منسٹر آج تک بھی آبی سہولتوں کی فراہمی کیلئے کوئی خاطر خواہ اقدامات نہیں کیا ہے۔ ضلع کے دورہ کے موقع پر چیف منسٹر سے عوام کی امیدیں وابستہ تھی لیکن چیف منسٹر عوام کی امیدوں پر پانی پھیر دیا۔ طمانیت روزگار کا ذکر کرتے ہوئے مسٹر مدھوگوڑ یاشکی نے کہا کہ مرکزی حکومت کی جانب سے فراہم کردہ فنڈس کے استعمال کے ذریعہ دیہی ترقی، کے ٹی آر اس فنڈس کو لیگل کاموں کیلئے استعمال کرتے ہوئے اپنے ترقیاتی کام کی حیثیت سے پیش کررہے ہیں۔ اس موقع پر سابق گورنمنٹ وہپ انیل کمار نے بتایا کہ روپیوں کے حصول کیلئے پرانہیتا چیوڑلہ کے ڈیزائن میں تبدیلی میں عمل میں لانے سے کسانوں کو کوئی فائدہ حاصل ہونے والا نہیں ہے۔ انجینئر کی ترغیب پر ڈیزائن کی تبدیلی عمل میں لائی گئی۔ رکن پارلیمان کے کویتا اپنے آبائی وطن سدی پیٹ کو پانی فراہم کرنے کیلئے سنجیدہ اقدامات کررہی ہے لیکن ضلع میں آبی سہولتوں کی فراہمی کیلئے کوئی اقدامات نہیں کیا ۔انہوں نے حکومت کی ناکامیوں کیخلاف جدوجہد کو جاری رکھنے کا اعلان کیا۔

TOPPOPULARRECENT