عوام پر بے تحاشہ بوجھ، حکومت کا ’’مجرمانہ‘‘ اقدام: اپوزیشن

نئی دہلی /20 جون (سیاست ڈاٹ کام) اپوزیشن پارٹیوں نے ریلوے کرایوں میں اضافہ کے لئے حکومت کے فیصلہ پر شدید تنقید کی اور اسے عوام پر بے تحاشہ بوجھ ڈالنے والا مجرمانہ اقدام قرار دیا۔ اپوزیشن نے حکومت سے یہ بھی استفسار کیا کہ آیا ریلوے کرایوں میں اضافہ کا فیصلہ کرنے سے قبل پارلیمنٹ کو اعتماد میں کیوں نہیں لیا گیا؟۔ اس طرح کے فیصلہ کی افادی

نئی دہلی /20 جون (سیاست ڈاٹ کام) اپوزیشن پارٹیوں نے ریلوے کرایوں میں اضافہ کے لئے حکومت کے فیصلہ پر شدید تنقید کی اور اسے عوام پر بے تحاشہ بوجھ ڈالنے والا مجرمانہ اقدام قرار دیا۔ اپوزیشن نے حکومت سے یہ بھی استفسار کیا کہ آیا ریلوے کرایوں میں اضافہ کا فیصلہ کرنے سے قبل پارلیمنٹ کو اعتماد میں کیوں نہیں لیا گیا؟۔ اس طرح کے فیصلہ کی افادیت کا سوال اٹھاتے ہوئے اپوزیشن نے کہا کہ جب بجٹ سیشن سے پہلے ہی اعلان کیا گیا ہو تو اضافہ کو فوری واپس لیا جانا چاہئے۔ کانگریس لیڈر منیش تیواری نے کہا کہ اس فیصلہ میں حکومت کی حساسیت کی نوعیت کیا ہے۔ جو لوگ کل تک عام آدمی کے بارے میں تشویش ظاہر کر رہے تھے، اب اس کے برعکس عام آدمی پر بے تحاشہ بوجھ ڈال رہے ہیں، جنھوں نے انھیں ووٹ دیا ہے۔ بائیں بازو کی پارٹیوں نے وزیر اعظم نریندر مودی پر شدید تنقید کی اور سوال کیا کہ آیا عوام کو راحت پہنچانے کے لئے ان کا وعدہ یہی ہے؟ کیا انھیں ووٹ ڈالنے والے عوام کے کے لئے ’’یہ انعام‘‘ ہے۔

سی پی آئی (ایم) پولیٹ بیورو رکن برندا کرت نے کہا کہ ہم ریلوے کرایہ میں غیر معمولی اضافہ کی شدید مذمت کرتے ہیں، اس سے عوام پر بہت بڑا بوجھ عائد ہوگا، ایک ایسے وقت جب عوام مہنگائی سے پریشان ہیں۔ جنتادل (یو) نے بھی سابق وزیر ریلوے نتیش کمار کے خیال کی حمایت کی اور کہا کہ این ڈی اے حکومت اسی روایت پر عمل کر رہی ہے، جو یو پی اے نے شروع کیا تھا۔ سماج وادی پارٹی نے اس اضافہ کی افادیت کا سوال اٹھایا اور کہا کہ مودی حکومت کے اچھے دن آنے والے یہی ہیں۔

چیف منسٹر تاملناڈو جیہ للیتا نے بھی ریلوے کرایہ میں اضافہ کی مخالفت کی اور وزیر اعظم نریندر مودی پر زور دیا کہ وہ اس اضافہ کو فوری واپس لیں۔ یہ ضافہ غریب اور متوسط طبقہ کے عوام کے لئے ایک بوجھ ہے۔ ریلوے شرح بار برداری میں اضافہ سے ترکاریوں اور دیگر ضروری اشیاء کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوگا۔ اسی دوران سابق وزیر ریلوے اور آر جے ڈی صدر لالو پرساد یادو نے ریلوے کرایوں میں اضافہ کو عام آدمی پر پہلا وار قرار دیا۔ بی جے پی نے عام انتخابات میں اچھے دن آنے کا وعدہ کرکے بے وقوف بنایا تھا۔ حکومت نے عام آدمی کے سینے پر توپ سے پہلا گولہ داغا ہے، انھیں یاد نہیں ہے کہ سابق میں کسی حکومت نے ریلوے کرایوں میں اتنا بے تحاشہ اضافہ کیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT