Monday , November 20 2017
Home / سیاسیات / عوام کو بار بار بے وقوف نہیں بنایا جاسکتا، شیوسینا کا ردعمل

عوام کو بار بار بے وقوف نہیں بنایا جاسکتا، شیوسینا کا ردعمل

’’سیاسی قوت، پیسے کی طاقت اور کئی اعلانات کے باوجود وزیراعظم مودی کی بی جے پی بہار میں ہار گئی‘‘
ممبئی ، 9 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) بڑی سیاسی ساکھ کے حامل بہار اسمبلی چناؤ میں عظیم اتحاد کو زبردست کامیابی حاصل ہونے کے ایک روز بعد شیوسینا نے اپنے اتحادی شراکت دار بی جے پی پر شدید چوٹ کرتے ہوئے آج کہا کہ یہ انتخابی فیصلہ نے ثابت کردیا ہے کہ عوام کو ’’صرف ایک مرتبہ بے وقوف بنایا‘‘ جاسکتا ہے۔ پارٹی ترجمان ’سامنا‘ کے اداریہ میں یہ بھی کہا گیا کہ جے ڈی (یو) لیڈر نتیش کمار کا غیرمعمولی مظاہرہ کئی عوامل کے سبب ہے، جن میں کلیدی اُن کی ’’صاف ستھری‘‘ انتخابی مہم اور دیانت دار ہونے کا امیج ہے۔ ’’وہ جنھوں نے دہلی اسمبلی الیکشن کو رواروی سے دیکھا تھا انھیں بہار کے نتائج پر سنجیدہ ہونا پڑے گا کیونکہ یہ نتیش کمار اور نریندر مودی کے درمیان راست مقابلہ ہوا۔ سیاسی قوت، پیسے کی طاقت اور مختلف اعلانات کے باوجود بی جے پی 60 نشستیں تک جیت نہ سکی جبکہ اس کے اتحادیوں کو زمین میں 20 فیٹ تک دھنسا دیا گیا ہے،‘‘ یہ ریمارکس شیوسینا کے ہیں، حالانکہ وہ مرکز اور مہاراشٹرا میں بی جے پی زیرقیادت حکومتوں کی شراکت دار ہے۔ اداریہ نے کہا کہ عظیم اتحاد کی جیت کے پس پردہ وجوہات میں سے ایک یہ ہے کہ نتیش نے دروغ گوئی سے کام نہیں لیا اور عوام کو اعتماد میں لینے کے بعد کام کرکے دکھایا ہے۔ ’’انھوں نے جھوٹے وعدے نہیں کئے، غنڈہ گردی کو روکا اور لا اینڈ آرڈر کا ماحول پیدا کیا۔ انھوں نے پیسے اور اقتدار کی طاقت کا مظاہرہ نہیں کیا۔ وہ سادگی کے ساتھ آگے بڑھتے رہے اور انتخابی مہم کے دوران غیرمہذب زبان کا استعمال نہیں کیا۔ یہ سب اُن کی فتح کا سبب ہوئے۔‘‘ سامنا کے اداریہ نے بی جے پی کی سخت مذمت میں مزید کہا: ’’کوئی بھی اقتدار اور پیسے کی طاقت کو بروئے کار لاتے ہوئے صرف ایک بار الیکشن جیت سکتا ہے، جیسے آپ کسی شخص کو ایک مرتبہ بے وقوف بناسکتے ہو … ہم نہیں جانتے نتیش کمار کی کامیابی کے بعد آیا پاکستان میں پٹاخے جلائے گئے یا نہیں، لیکن بہار میں یقینا پٹاخے جلائے جارہے ہیں۔‘‘ شیوسینا نے کہا کہ ان نتائج میں یہی سبق ہے کہ انکساری نام ونمود کے اظہار کیلئے استعمال ہونے والا کوئی زیور نہیں بلکہ خودحفاظتی ہتھیار ہے۔ بی جے پی سربراہ امیت شاہ نے بہار میں انتخابی مہم کے دوران کہا تھا کہ اگر غلطی سے بی جے پی یہ چناؤ ہار جاتی ہے تو پاکستان میں پٹاخے جلیں گے۔ جے ڈی (یو)، آر جے ڈی اور کانگریس (عظیم اتحاد کے شرکاء) کیلئے مودی کے مقابل گزشتہ لوک سبھا چناؤ میں اپنی شکست فاش کے بعد شاندار واپسی میں تینوں پارٹیوں نے مل کر 243 رکنی بہار اسمبلی میں 178 نشستیں جیت لئے ہیں۔آر جے ڈی نے 80، جے ڈی (یو) نے 71، کانگریس نے 27 جبکہ بی جے پی نے 53 نشستیں جیتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT