Saturday , January 20 2018
Home / شہر کی خبریں / عوام کے سچے خدمت گذاروں کے انتخاب سے مسائل کی یکسوئی ممکن

عوام کے سچے خدمت گذاروں کے انتخاب سے مسائل کی یکسوئی ممکن

حلقہ یاقوت پورہ کے مسائل رکن کی نااہلی کا نتیجہ ،جلسہ عام سے فرحت اللہ خاں کا خطاب

حلقہ یاقوت پورہ کے مسائل رکن کی نااہلی کا نتیجہ ،جلسہ عام سے فرحت اللہ خاں کا خطاب
حیدرآباد 14 اپریل (سیاست نیوز ) عوام سچے خدمت گذاروں کو موقع فراہم کریں تو حلقہ یاقوت پورہ ہی نہیں بلکہ شہر حیدرآباد کا نقشہ بدل جائے گا ۔ گذشتہ 20 برسوں سے حلقہ اسمبلی یاقوت پورہ کی اسمبلی میں موثر نمائندگی نہیں ہے اور نہ ہی حلقہ اسمبلی یاقوت پورہ میں کوئی ترقیاتی کام ہوئے ہیں۔ جناب مجید اللہ خان فرحت انجینئر امیدوار حلقہ اسمبلی یاقوت پورہ مجلس بچاو تحریک نے مسجد حضارم واحد کالونی میں منعقدہ عظیم الشان انتخابی جلسہ عام سے خطاب کے دوران ان خیالات کا اظہار کیا ۔ انہوں نے کہا کہ ان کے انتخاب کو حلقہ کے عوام یقینی بنانے تیار ہیں اور ان کا انتخاب حلقہ اسمبلی یاقوت پورہ کے ہر رائے دہندے کا انتخاب ثابت ہوگا ۔ جناب مجید اللہ خان فرحت نے کہا کہ وہ رکن اسمبلی بنتے ہیں تو حلقہ میں ایک انچ سرکاری اراضی پر قبضہ نہیں ہوگا اور علاقہ کا ہر فرد رکن اسمبلی ہوگا ۔ انہوں نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دولت کے بل پر انتخابات میں کامیابی کا خواب دیکھنے والوں کو چاہئے کہ وہ عوام کے درمیا ن اپنی حقیقت دیکھ لیں۔ تحریک کے امیدوار نے کہا کہ ریاست تلنگانہ میں مسلم قوم تابعداری نہیں کرے گی بلکہ اس بدلتے سیاسی منظر نامے میں مجلس بچاو تحریک ساجھے داری کی بات کرے گی اور مسلمانوں کو ان کے حقوق دلوانے تک جدوجہد جاری رہے گی۔ انہوںنے معصوم عوام کے جذبات کا استحصال کرنے والوں سے استفسار کیا کہ وہ سرکاری اسکولوں کی فروخت اور لینڈ گرابنگ کے معاملات میں عوام کو جواب دیں۔ انہوں نے بتایا کہ حلقہ اسمبلی ملک پیٹ میں مجلس بچاؤ تحریک اپنی ایک طاقت رکھنے کے باوجود اور ایک منتخبہ کارپوریٹر ہونے کے باوجود اسمبلی سے مقابلہ پر خاموش رہی تا کہ مسلم ووٹ کی تقسیم کا بھارتیہ جنتا پارٹی کو فائدہ نہ ہو ۔ انہوں نے کہا کہ ملک پیٹ میں اگر مجلس بچاو تحریک کا امیدوار جیت نہیں سکتا تو ہرانے کی قوت ضرور رکھتا ہے لیکن ملت کے اتحاد کی خاطر مسلم ووٹ متحد رکھنے کی خاطر ایسا نہیں کیا گیا اسی طرح حلقہ اسمبلی کاروان میں بدم بال ریڈی کو کامیاب ہونے سے روکنے کیلئے تحریک نے اپنا امیدوار میدان میں نہیں اُتارا تا کہ مسلم ووٹ تقسیم ہونے کا فائدہ کسی اور کو نہ پہنچے ۔ انہوں نے کہا کہ تحریک نے یہ عملی اتحاد کا پیغام دیا اور اگر تم اتحاد کی دہائی دے رہے ہو تو اس طرح کا پیغام پیش کرو ۔ جناب مجید اللہ خان فرحت نے کہا کہ ریاست کی بدلتی صورتحال میں یہ ضروری ہے کہ مسلمانوں کی بے خوف آواز ایوان اسمبلی میں ہو جو کہ ملی مفادات کا سودا نہ کرے بلکہ ملی مفادات کے تحفظ کے لئے اٹھے ۔ انہوں نے ریاست گیر سطح پر اوقافی جائیدادوں کی تباہی کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ ان جائیدادوں کو جس انداز سے تباہ کیا جارہا ہے اسے دیکھ کر یہ واضح ہوجاتا ہے کہ ان جائیدادوں کی تباہی کے مرتکبین کوہمارے آستینوں میں چھپے نام نہاد قائدین کی مدد حاصل ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اگر ایوانوں میں تحریک کی بے باک آواز پہنچتی ہے تو مودی ،آر ایس ایس ، بی جے پی سے خوفزدہ نہیں ہوگی بلکہ انہیں خوفزدہ کرے گی ۔ جناب مجید اللہ خان فرحت نے خواتین سے اپیل کی کوہ اپنے ووٹ کی اہمیت کو سمجھیں اور 30 اپریل کو قطار در قطار مراکز رائے دہی پر پہنچ کر مجلس بچاو تحریک کے امیدواروں کے حق میں اپنے ووٹ کا استعمال کرتے ہوئے ٹی وی کے نشان کا بٹن دبائیں۔ انہو ںنے حلقہ اسمبلی یاقوت پورہ کے لئے رائے دہندوں سے خواہش کی کہ وہ ان انتخابات میں خود کو امیدوار سمجھیں اور اس الیکشن کو اپنا الیکشن تصور کرتے ہوئے رائے دہی کے فیصد میں بہتری پیدا کریں اور مراکز رائے دہی کو غنڈہ گردی سے پاک بنائیں۔

TOPPOPULARRECENT