Monday , December 11 2017
Home / Top Stories / غذائی اجناس ، صابن ، ہیر آئیل ، برقی سستے

غذائی اجناس ، صابن ، ہیر آئیل ، برقی سستے

کاروںپر 28 فیصد ٹیکس اور سیس عائد کیا جائے گا، جی ایس ٹی کونسل کے اجلاس میں اہم فیصلے

سرینگر۔ /18 مئی (سیاست ڈاٹ کام)  غذائی اجناس اور روزمرہ کے استعمال کی اشیاء جیسے ہیر آئیل ، صابن اور ٹوتھ پیسٹ کے علاوہ برقی یکم جولائی سے جی ایس ٹی کے نفاذ کے ساتھ ہی سستے ہوجائیں گے ۔ آج انتہائی بااختیار جی ایس ٹی کونسل نے کئی اشیاء پر ٹیکس شرحوں کو قطعیت دیدی ۔ کونسل نے 6 اشیاء کو چھوڑ کر مابقی دیگر تمام کیلئے 5 ، 12 ، 18 یا 28 فیصد ٹیکس زمرے بنائے ہیں ۔ کاروں پر سب سے زیادہ ٹیکس عائد ہوگا ۔ اس کے ساتھ ساتھ 1 تا 15 فیصد کی حد میں سیس (ٹیکس) بھی عائد کیا جائے گا ۔ چھوٹی کاروں پر 28 فیصد ٹیکس کے ساتھ ساتھ 1 فیصد سیس عائد ہوگا ۔ اسی طرح درمیانی سائز کی کاروں پر 3 فیصد سیس اور لکژری کاروں پر 15 فیصد سیس عائد کیا جائے گا ۔ مشروبات کو بھی 28 فیصد ٹیکس کے زمرہ میں رکھا گیا ہے لیکن بیڑی ، سونا ، فٹ ویئر اور برانڈیڈ ایٹمس کے بارے میں کل فیصلہ کیا جائے گا ۔ کوئلہ پر گڈس اینڈ سرویسیس ٹیکس ( جی ایس ٹی) کو کم کرکے 5 فیصد کیا گیا ہے جبکہ اس وقت 11.69 فیصد ٹیکس عائد کیا جاتا ہے ۔ اس طرح برقی پیداوار سستی ہوجائے گی ۔ جی ایس ٹی کونسل کا دو روزہ اجلاس آج وزیر فینانس ارون جیٹلی کی زیرقیادت شروع ہوا ۔ عام استعمال کی اشیاء جیسے ہیر آئیل ، صابن اور ٹوتھ پیسٹ پر 18 فیصد جی ایس ٹی عائد ہوگا ۔ جبکہ اس وقت مرکزی اور ریاستی حکومتوں کے محاصل کو شامل کرنے کے بعد 22 تا 24 فیصد ٹیکس عائد ہے ۔ ایرکنڈیشنس اور ریفریجریٹرس کو 28 فیصد ٹیکس زمرہ میں شامل کیا گیا ہے جبکہ زندگی بچانے والی ادویات پر 5 فیصد ٹیکس عائد کیا جائے گا ۔ کیپیٹل گڈس اور صنعتی اشیاء پر موجودہ 28 فیصد کے بجائے 18 فیصد ٹیکس عائد رہے گا ۔ دؤدھ اور دہی کو ٹیکس سے استثنیٰ برقرار رکھا گیا ہے ۔ جبکہ مٹھائی پر 5 فیصد ٹیکس عائد کیا جائے گا ۔ روزمرہ کے استعمال کی اشیاء جیسے شکر ، چائے ، کافی (انسٹینٹ کافی نہیں) اور خوردنی تیل پر اقل ترین 5 فیصد ٹیکس عائد رہے گا ۔ غذائی اجناس بالخصوص گیہوں اور چاول بھی سستے ہوں گے کیونکہ انہیں جی ایس ٹی سے استثنیٰ دیا گیا ۔ اس وقت بعض ریاستیں ان پر ویاٹ عائد کررہی ہے ۔ ارون جیٹلی نے اجلاس کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے کئی اشیاء کی ٹیکس شرحوں کو قطعیت دیدی ہے ۔ اس کے علاوہ آج کے اجلاس میں بعض اشیاء کو استثنیٰ کے بارے میں فیصلہ کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مابقی اشیاء کے بارے میں کل فیصلہ کیا جائے گا ۔ پیکیجیڈ فوڈ ایٹمس کے بارے میں بھی کل فیصلہ ہوگا ۔

TOPPOPULARRECENT