Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / غریب اقلیتی طلبہ کو معیاری اسکولس میں تعلیم کی اسکیم

غریب اقلیتی طلبہ کو معیاری اسکولس میں تعلیم کی اسکیم

دیگر طبقات میں اسکیم پر عمل ، محکمہ اقلیتی بہبود کی تجویز حکومت کے زیر غور
حیدرآباد۔/6نومبر، ( سیاست نیوز) محکمہ اقلیتی بہبود نے غریب اقلیتی طلباء کو معیاری خانگی اسکولوں میں تعلیم دلانے کیلئے خصوصی اسکیم تیار کی ہے جس پر عمل آوری کیلئے حکومت کی منظوری کا انتظار ہے۔ ریاست میں ایس سی، ایس ٹی طبقات سے تعلق رکھنے والے طلباء کو معیاری خانگی اسکولوں میں داخلہ سے متعلق اسکیم موجود ہے۔ اس اسکیم کی طرز پر اقلیتوں کیلئے بھی علحدہ اسکیم تیار کرتے ہوئے سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے منظوری کیلئے چیف منسٹر کے دفتر روانہ کیا ہے۔ اس اسکیم کے تحت شہر اور اضلاع کے انتہائی معیاری اسکول اور کالجس میں اقلیتی طلباء کیلئے خصوصی کوٹہ مقرر کرتے ہوئے ان کے داخلوں کو یقینی بنایا جائے گا۔ ان طلباء کے تعلیمی اخراجات حکومت ادا کرے گی۔ دیگر طبقات کیلئے کئی برسوں سے یہ اسکیم نافذ ہے لیکن اقلیتیں اس کے فوائد سے محروم تھے۔ بیسٹ ایویلبل اسکول اسکیم کے نام سے اسے تیار کیا گیا اور حکومت سے منظوری کی صورت میں آئندہ سال سے نفاذ عمل میں آئے گا۔ سکریٹری اقلیتی بہبود نے بتایا کہ حکومت کی منظوری کے بعد حیدرآباد کے تمام خانگی نامور اور معیاری اسکولس اور کالجس میں اقلیتی طلباء کے داخلے کو یقینی بنایا جاسکتا ہے۔ اس اسکیم کے ذریعہ ایسے غریب خاندانوں کے طلباء کا انتخاب کیا جائے گا جو خانگی مدارس کے اخراجات ادا کرنے کے موقف میں نہیں ہیں۔ انہیں حکومت تمام سہولتیں فراہم کرتے ہوئے داخلہ دلائے گی اور معیاری تعلیم سے ہمکنار کرے گی۔ انہوں نے کہا دولت مند افراد اپنے بچوں کو معیاری خانگی مدارس میں تعلیم دلانے کے متحمل ہیں لیکن غریب طبقات اس سہولت سے محروم ہیں۔ انہوں نے ایس سی، ایس ٹی طبقہ کیلئے عمل کی جارہی اسکیم کا جائزہ لینے کے بعد اقلیتوں کیلئے علحدہ اسکیم تیار کی ہے۔ حکومت کی جانب سے منظوری کی صورت میں نہ صرف اسکول بلکہ خانگی کالجس میں اقلیتی طلباء کیلئے داخلے کی راہ ہموار ہوجائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ میں اقلیتوں کیلئے ہاسٹلس اور اقامتی مدارس کے قیام کا منصوبہ تیار کیا گیا ہے اور اس کے لئے اراضی کے انتخاب کا کام جاری ہے۔ 10ہاسٹلس کیلئے اراضی کی نشاندہی مکمل ہوچکی ہے اور جاریہ سال تعمیری کام کا آغاز کرتے ہوئے آئندہ تعلیمی سال سے ہاسٹلس کو کارکرد بنایا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ ہاسٹلس اور اقامتی مدارس کی بہتر کارکردگی کیلئے انہیں ایس سی، ایس ٹی ہاسٹل کی نگرانی کرنے والی سوسائٹی کے تحت کرنے کی تجویز ہے۔ سید عمر جلیل نے بتایا کہ آئندہ بجٹ میں محکمہ اقلیتی بہبود بعض نئی اسکیمات کے آغاز کا منصوبہ رکھتا ہے۔ اس سلسلہ میں تجاویز حکومت کو روانہ کی جارہی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT