Sunday , August 19 2018
Home / شہر کی خبریں / غریب خاندان کے گھر میں خوشیاں لوٹ آئیں

غریب خاندان کے گھر میں خوشیاں لوٹ آئیں

کمسن کے عارضہ قلب کا علاج ، ٹی ہریش راؤ کی خصوصی دلچسپی پر عوام سے ستائش
حیدرآباد ۔25۔ ڈسمبر (سیاست نیوز) وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ غریب خاندانوں کی خاموش خدمت کیلئے میدک ضلع کے عوام کے دلوں میں جگہ بنا چکے ہیں۔ کوئی بھی غریب اپنے مسائل کے ساتھ ان کی قیامگاہ پہنچنے کے بعد مایوس نہیں لوٹتا۔ ہریش راؤ کسی نہ کسی طرح اس کی مدد ضرور کرتے ہیں، چاہے اس غریب خاندان کا تعلق کسی علاقہ سے ہو۔ اپنی غیر معمولی مصروفیت اور آبپاشی جیسے اہم قلمدان کی ذمہ داری نبھاتے ہوئے سوشیل میڈیا کو فالو کرنا آسان نہیں۔ ہریش راؤ کسی نہ کسی طرح غریبوں کے مسائل سے واقفیت کیلئے سوشیل میڈیا کا استعمال کرتے ہیں۔ انہوں نے سوشیل میڈیا پر ایک غریب خاندان کی اپیل دیکھنے کے بعد اس خاندان کی کمسن لڑکی کو نئی زندگی دلانے کیلئے علاج کا انتظام کیا۔ ہریش راؤ کی مساعی سے توپران سے تعلق رکھنے والے غریب خاندان کے گھر میں خوشیاں لوٹ آئیں اور کمسن لڑکی قلب کے عارضہ کے علاج کے بعد مکمل صحت مند ہوچکی ہے۔ ہریش راؤ کی سرکاری قیامگاہ واقع منسٹرس کوارٹرس میں اس وقت جذباتی مناظر دیکھے گئے ، جب 7 سالہ کمسن الیکھیا اپنے والدین کے ساتھ شکریہ ادا کرنے کیلئے پہنچی۔ اس کمسن کو مکمل صحتمند دیکھ کر ہریش راؤ بھی جذبات سے مغلوب ہوگئے۔ شہرت کے بغیر عوامی خدمت کیلئے ہریش راؤ اپنے حامیوں میں جانے جاتے ہیں۔ سیاسی میدان میں اپنے حریفوں کو شکست دینے اور ہمیشہ ترقیاتی کاموںکے ذریعہ سرخیوں میں رہنے والے ہریش راؤ ان دنوں مشن کاکتیہ کے تحت تلنگانہ کی ہر انچ زمین کو سیرآب کرنے میں مصروف ہیں۔ ان کی انسانی ہمدردی سے متعلق خبروں کو ہمیشہ شہرت سے دور رکھا جاتا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ میدک ضلع کے توپران سے تعلق رکھنے والے غریب چندرم کی 7 سالہ لڑکی عارضہ قلب میں مبتلا تھی۔ اس نے لڑکی کے علاج کے لئے مختلف افراد اور تنظیموں کا رخ کیا لیکن انہیں مایوسی ہوئی۔ آخر کار چندرم نے سوشیل میڈیا کا سہارا لیتے ہوئے امداد کی اپیل کی ۔ ہریش راؤ کی نظر اسی طرح سوشیل میڈیا میں چندرم کی اپیل پر پڑی۔ انہوں نے اس غریب خاندان کو طلب کرتے ہوئے لڑکی کی صحت کے بارے میں دریافت کیا۔ انہوں نے ڈاکٹرس سے بھی اس لڑکی کے علاج کے بارے میں معلومات حاصل کی۔ ڈاکٹرس نے بتایا کہ قلب کے علاج پر فوری توجہ کی ضرورت ہے اور انسٹنٹ ڈالنا پڑے گا۔ لڑکی کے والد نے کہا کہ نیلوفر ہاسپٹل کے ڈاکٹرس نے انہیں فوری علاج کا مشورہ دیا ہے۔ اس خاندان کی بپتا سننے کے بعد ہریش راؤ نے علاج کا مکمل خرچ برداشت کرنے کا اعلان کیا اور کیر ہاسپٹل بنجارہ ہلز سے لڑکی کو رجوع کیا گیا۔ چیف منسٹر ریلیف فنڈ سے 4 لاکھ روپئے منظور کرائے گئے۔ کیر ہاسپٹل کے ڈاکٹرس نے انسٹنٹ لگاتے ہوئے خون کے دوران کو بحال کیا اور لڑکی صحتمند ہوکر ڈسچارج ہوگئی۔ غریب خاندان ہریش راؤ کا شکریہ ادا کرنے کیلئے منسٹرس کوارٹرس پہنچا۔ ہریش راؤ کو اس بات کا اطمینان تھا کہ ان کی مساعی سے ایک کمسن لڑکی کی زندگی بچ گئی اور پریشان حال خاندان میں خوشیاں لوٹ آئیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT