Sunday , June 24 2018
Home / Top Stories / غزہ میں اقوام متحدہ اسکول پر اسرائیل کی بمباری

غزہ میں اقوام متحدہ اسکول پر اسرائیل کی بمباری

غزہ ؍ یروشلم ۔ 24 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) اِسرائیلی ٹینکس نے آج حماس زیراقتدار غزہ پٹی میں اقوام متحدہ کے تحت چلائے جارہے اسکول پر بمباری کی جس کے نتیجہ میں یہاں پناہ لینے والے 15 افراد جاں بحق اور دیگر کئی زخمی ہوگئے۔ اسرائیل کا حماس کے خلاف ’’آپریشن پروٹیکٹیو ایڈج‘‘ آج 17 ویں دن میں داخل ہوگیا اور اسرائیلی ڈیفنس فورس کی زمینی کارروا

غزہ ؍ یروشلم ۔ 24 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) اِسرائیلی ٹینکس نے آج حماس زیراقتدار غزہ پٹی میں اقوام متحدہ کے تحت چلائے جارہے اسکول پر بمباری کی جس کے نتیجہ میں یہاں پناہ لینے والے 15 افراد جاں بحق اور دیگر کئی زخمی ہوگئے۔ اسرائیل کا حماس کے خلاف ’’آپریشن پروٹیکٹیو ایڈج‘‘ آج 17 ویں دن میں داخل ہوگیا اور اسرائیلی ڈیفنس فورس کی زمینی کارروائی ساتویں دن میں داخل ہوگئی ہے۔ اسرائیلی ٹینکس نے بیت حنون میں واقع اس اسکول پر شلباری کی اور یہاں کافی تباہی ہوئی۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق اسکول کے احاطہ میں ہر طرف خون دکھائی دے رہا تھا۔ کتابیں اور فرنیچر اِدھر اُدھر بکھرے پڑے تھے۔ اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بانکی مون نے اسکول پر حملے کی سخت مذمت کی جس میں کئی خواتین، بچے اور اقوام متحدہ کا اسٹاف ہلاک ہوگیا۔ انہوں نے کہا کہ عام شہریوں اور اقوام متحدہ کے احاطہ میں حملوں کا سلسلہ فوری روک دیا جانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ فلسطینی پناہ گزینوں کے لئے چلائے جارہے اِ س اسکول پر حملے کی اطلاع سے انہیں بے حد صدمہ پہنچا۔ اس اسکول میں ہزاروں لوگ پناہ لئے ہوئے تھے۔

انہوں نے کہا کہ آج کے اس حملے نے یہ ثابت کردیا ہے کہ بے قصور ہلاکتوں کا سلسلہ اب فوری رکنا چاہئے۔ انہوں نے مہلوکین کے ورثا سے تعزیت کا اظہار کیا۔ اس دوران حماس کے سربراہ خالد مشعل نے کہا کہ جنگ بندی معاہدہ کے لئے وہ تیار ہیں لیکن شرط یہ ہے کہ اسرائیل غزہ کا محاصرہ ختم کرے۔ انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی برادری کو یہ بات یقینی بنانی ہوگی کہ اسرائیل غزہ کا محاصرہ حقیقی معنوں میں ختم کرے۔ انہوں نے کہا کہ ہم کسی میکانزم میں دلچسپی نہیں رکھتے۔ ہم چاہتے ہیں کہ محاصرہ ختم کرنے کی طمانیت دی جائے۔ اس سے پہلے بھی ایسے کئی وعدے کئے گئے لیکن ان پر کوئی عمل نہیں ہوا۔ ہم چاہتے ہیں کہ ایک انٹرنیشنل ایرپورٹ اور بندرگاہ تعمیر کی جائے اور بیرونی دنیا سے ہمارا رابطہ قائم رہے۔ وزیراعظم ترکی رجب طیب اردگان نے آج کہا کہ ’’غزہ میں اسرائیل کے مظالم کا سلسلہ یوں ہی جاری رہا تو اس کے خلاف بین الاقوامی عدالت میں مقدمہ چلایا جائے گا۔ انہوں نے اسرائیل پر ناحق خون بہانے کا الزام عائد کیا۔ انہوں نے کہا کہ اسرائیل کو اپنی روش تبدیل کرنی ہوگی ورنہ بین الاقوامی عدالت میں اس کے خلاف مقدمہ چلایا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT