Wednesday , September 26 2018
Home / Top Stories / غزہ پر اسرائیل کے حملے جاری : جنگ بندی کیلئے مصری کوششیں ناکام

غزہ پر اسرائیل کے حملے جاری : جنگ بندی کیلئے مصری کوششیں ناکام

یروشلم / غزہ 15 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) اسرائیل نے مصر کی جانب سے غزہ میں جنگ بندی کی کوششوں کے ناکام ہوجانے کے بعد آج دوبارہ اپنے فضائی حملے اور بمباری کا آغاز کردیا ہے اور اب تک اسرائیل کی درندگی اور جارحیت کے نتیجہ میں جاں بحق ہونے والے فلسطینیوں کی تعداد 195 تک پہونچ گئی ہے ۔ گذشتہ آٹھ دن سے اسرائیل مسلسل غزہ پر بمباری کر رہا ہے ۔ حما

یروشلم / غزہ 15 جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) اسرائیل نے مصر کی جانب سے غزہ میں جنگ بندی کی کوششوں کے ناکام ہوجانے کے بعد آج دوبارہ اپنے فضائی حملے اور بمباری کا آغاز کردیا ہے اور اب تک اسرائیل کی درندگی اور جارحیت کے نتیجہ میں جاں بحق ہونے والے فلسطینیوں کی تعداد 195 تک پہونچ گئی ہے ۔ گذشتہ آٹھ دن سے اسرائیل مسلسل غزہ پر بمباری کر رہا ہے ۔ حماس کی جانب سے یہودی مملکت پر راکٹ حملے بھی کئے جا رہے ہیں۔ اسرائیلی فوج کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ حماس کی جانب سے آج صبح غزہ پر اسرائیلی بمباری اور فضائی حملے روکے جانے کے بعد سے 47 راکٹس داغے گئے ہیں۔ اس کے نتیجہ میں اسرائیل نے جواب میں فضائی حملے کرنے کا ادعا کیا ہے ۔

علاوہ ازیں دیگر اطلاعات میں کہا گیا ہے کہ حماس کی راکٹ فائرنگ کے نتیجہ میں اسرائیل کو پہلے جانی نقصان کا سامنا کرنا پڑا ہے جبکہ ایک 38 سالہ اسرائیلی شخص ایریز کراسنگ پر حماس کے راکٹ کی زد میں آکر ہلاک ہوگیا ۔ کہا گیا ہے کہ یہ شخص وہاں برسر کار اسرائیلی فوجیوں میں غذائی اجناس سپلائی کر رہا تھا اور وہ راکٹ کی زد میں آکر ہلاک ہوگیا ۔ اسرائیلی ایمرجنسی خدمات کے ایک ترجمان نے یہ بات بتائی ۔ حماس کے حملوں میں اب تک چار اسرائیلی زخمی ہوئے ہیں۔ ایک اسرائیلی عہدیدار نے شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ وزیر اعظم اور وزیر دفاع اسرائیل نے اسرائیل کی مسلح افواج سے کہا کہ وہ غزہ میں دہشت گردوں کے ٹھکانوں کے خلاف سحت کارروائی کریں۔

کہا گیا ہے کہ آج کے اسرائیلی حملوں میں مزید تین فلسطینی جاں بحق ہوئے ہیں۔ علاوہ ازیں وزیر اعظم بنجامن نتن یاہو نے کہا کہ وہ غزہ پر اپنے حملوں کو مزید وسعت دینگے اور ان میں مزید شدت پیدا کرینگے ۔ ان کا ادعا ہے کہ حماس کی کارروائیوں کے جواب میں اب اسرائیل کے پاس اپنی کارروائیوں کو وسعت دینے کے علاوہ کوئی اور راستہ نہیں رہ گیا ہے ۔

بعض ذرائع نے کہا کہ اسرائیل میں ہلاک ہونے والا شخص سپاہی تھا ۔ فلسطینی گروپ حماس نے جنگ بندی کی پیشکش کو قبول کرتے ہوئے کہا کہ یہ حماس کیلئے خود سپردگی ہے جو قبول نہیں کی جائیگی ۔ بنجامن نتن یاہو نے کہا کہ اگر حماس نے جنگ بندی کی پیشکش کو قبول نہیں کیا اور کارروائی جاری رکھتا ہے تو اسرائیل کو اپنے حملوں میں وسعت دینے بین الاقوامی سطح پر کسی مخالفت کا سامنا کرنا نہیں پڑیگا ۔ انہوں نے کہا کہ اسرائیل چاہتا ہے کہ غزہ کو ہتھیاروں سے پاک کیا جائے اور وہ کسی بھی راکٹ حملہ کا مزید شدت کے ساتھ جواب دیگا ۔ اس دوران بین الاقوامی سطح پر سوشیل نیٹ ورکنگ سائیٹس پر ایسی تصاویر پیش کی گئی ہیں جن میں اسرائیلی باشندوں کو غزہ کی سمت ایک پہاڑی پر کھڑے ہو کر فوجی کارروائیوں کا تفریحی انداز میںمشاہدہ کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے ۔ مختلف گوشوں سے ان تصاویر کی شدید مذمت کی گئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT