Sunday , August 19 2018
Home / Top Stories / غزہ پر اسرائیل کے فضائی حملے ‘2افراد ہلاک

غزہ پر اسرائیل کے فضائی حملے ‘2افراد ہلاک

HALHOUL, FEB 17:- A Palestinian demonstrator burns tyres during clashes with Israeli troops in Halhoul, in the occupied West Bank February 17, 2018. REUTERS-29R

فلسطینیوںکی چوٹی کانفرنس کے دوران دھماکہ ‘ اسرائیلی فوج کی جوابی کارروائی
غزہ سٹی ۔ 18فبروری (سیاست ڈاٹ کام) سرائیلی جٹ لڑاکا طیاروں نے غزہ پٹی پر فضائی حملہ کردیا جس کے نتیجہ میں 2افراد ہلاک اور 4 عمر رسیدہ افراد زخمی ہوگئے۔ قبل ازیں ترقی یافتہ دھماکو آلہ فلسطین کی چوٹی کانفرنس کے دوران دھماکہ کل ہوا تھا جس سے دو اسرائیلی فوجی شدید زخمی ہوگئے تھے جن میں سے ایک سنگین حالت میں تھا ۔ اس واقعہ سے حماس زیر اقتدار غزہ پٹی میں چوٹی کانفرنس کشیدگی کا شکار ہوگئی تھی ۔ اسرائیل اور حماس 2014ء میں ایک جنگ کرچکے ہیں ‘ جوابی کارروائی کے طور پر اسرائیل کی فوج نے دہشت گردوں کے 18ٹھکانوں پر حملہ کیا ‘ جو حماس کی دہشت گرد تنظیم کی ملکیت ہیں۔ فضائی حملوں کے دو دور ہوئے جن میں عسکریت پسندوں کی 8 عمارتوں کو حملوں کا نشانہ بنایا گیا جو دائرالبلاح کے قریب ہیں اور ان میں تربیت دینے کا انفراسٹرکچر موجود ہیں ۔ اتوار کے ابتدائی وقت میں ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ لڑاکا جٹ طیاروں نے 6 فوجی اڈوں کو غزہ میں حملوں کا نشانہ بنایا ۔ یہ اڈے حماس کی ملکیت ہیں ۔ یہاں پر دہشت گرد سرنگ بھی زیتون فوج اور فوجی عمارت کے قریب موجود ہے جو دائرالبلاح اور خان یونس تک پہنچتی ہے ۔ فوج نے اطلاع دی کہ غزہ اور اسرائیلی سرزمین پر حملوں کا آغاز کیا گیا ہے ۔ ایک مکان کے قریب جنوبی اسرائیل میں پوری برادری کو نشانہ بنایا گیا تھا ۔ وزیراعظم اسرائیل بنجامن نتن یاہو نے ایک صیانتی کانفرنس منعقدہ میونخ میں غزہ کے سرحدی علاقہ کا تذکرہ کرتے ہوئے اسے انتہائی سنگین قرار دیا اور عہد کیا کہ اس کا مناسب جواب دیا جائے گا ۔ فلسطین کے فوجی ذریعہ نے کہا کہ اسرائیل کے فضائی حملوں کا نشانہ حماس کی ملکیت تین عمارتیں بنائیں جو غزہ چوٹی کانفرنس کے جنوب میں تعمیر کی گئی تھیں ۔ دو فلسطینی اس دھاوے میں زخمی ہوئے ۔ فلسطینی طبی ذریعہ کے بموجب قبل ازیں جن میں دو فوجی شدید زخمی ہوئے تھے ان میں سے ایک کے زخم اوسط درجہ کے تھے اور ایک کے معمولی تھے ۔ ایک ترقی یافتہ دھماکو آلہ سرحد کی باڑ کے قریب دھماکہ سے پھٹ پڑا ۔ کسی بھی فوجی کی زندگی خطرے میں نہیں پڑی ‘ جوابی کارروائی کے طور پر اسرائیلی فوج نے ایک دبابے کے ذریعہ اپنی فوجی چوکی سے فائرنگ شروع کردی ۔ جنوبی غزا میں فائرنگ کے نتیجہ میں فلسطینی زخمی ہوئے ۔ فلسطینی فوجی ذرائع کے بموجب دھماکہ شہر کے مشرقی علاقہ خان یونس میں کیا گیا ۔ اسرائیلی فوج کے ترجمان لیفٹننٹ کرنل جناتھن کیپریکس نے کہا کہ ایک گروپ نے دھماکہ کی ذمہ داری قبول کرلی ہے ۔ امکان ہے کہ یہ اسلام پسندوں کا بنیاد پرست گروپ ہے جو غزہ میں موجود ہے لیکن اس نے پُرزور انداز میں کہا کہ ہمارے نقطہ نظر سے حماس ذمہ دارا ہے ۔ اُس نے دھماکو مادے ایک احتجاجی مظاہرے کے دوران جو قبل ازیں دن میں کیا گیا تھا دھماکو مادے نصب کئے تھے ۔ اسرائیلی فوج نے جوابی کارروائی کرتے ہوئے خودکار اسلحہ کے ذریعہ غزہ کی سرزمین پر جٹ طیاروں سے فائرنگ کی ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT