Monday , November 20 2017
Home / اضلاع کی خبریں / غم زدہ ارکان خاندان نے نعیم کی نعش حاصل کی

غم زدہ ارکان خاندان نے نعیم کی نعش حاصل کی

شاد نگر میں پولیس اور عوام کی بے چینی ختم ، زبردست بندوبست
شادنگر ۔ /9 اگست (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) انکاؤنٹر فرخنگر منڈل تحصیلدار بی چندر راؤ نے پولیس کی نگرانی میں پنچنامہ کرتے ہوئے انکاؤنٹر میں ہلاک سابقہ نکسلائیٹ بھونگیر نعیم کی نعش کو سرکاری ہاسپٹل شاد نگر منتقل کردیا تھا ۔ ہاسپٹل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر جھانسی لکشمی کی نگرانی میں ڈاکٹر ناظم الدین اور ڈاکٹر ملکا ارجن پوسٹ مارٹم انجام دیا ۔ بعد پوسٹ مارٹم نعش لینے کیلئے کل شام اور رات دیر گئے تک کوئی نہیں پہونچے اور آج صبح قریب ساڑھے 11 بجے دن نعیم کی نعش (میت) کو حاصل کرنے کیلئے نعیم کی بڑی بہن عائشہ بیگم کے ہمراہ ان کی دختر ساجدہ شاہین ، عافیہ سلطانہ ، فہیم ، ایم اے سلیم ، نظیر احمد سرکاری ہاسپٹل پہونچے ۔ اس موقع پر بھونگیر نعیم کی بھانجی ساجد شاہین اور دیگر افراد خاندان نعیم کی انکاؤنٹر میں موت کو لیکر کافی غم زدہ تھے ۔ ساجدہ شاہین نے اس موقع پر میڈیا کے نمائندوں سے مخاطب کرتے ہوئے غم کی حالت میں یہ کہہ رہی تھی کہ ہمارے ماموں کو ہم کو دے دو اور بہن عائشہ بیگم نے کہا کہ میرے کو میرا بھائی حوالے کردیں ۔ میڈیا کی جانب سے کئے گئے سوال کے جواب میں بہن اور بھانجی نے کہا کہ ان کے سرگرمیوں کے متعلق ہم کو علم و اطلاع نہیں ہے ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ہم لوگوں کو کل ٹی وی کے ذریعہ اطلاع ملی ۔ انہوں نے کہا کہ اطلاع ملنے کے ساتھ ہی میت کو حاصل کرنے کیلئے راجمنڈری سے نکل کر آئے ہیں افراد خاندان نے میڈیا اور پولیس سے اپیل کی ہے کہ ہم پر ظلم نہ کریں اور ہمارے ساتھ انصاف کریں ۔ میت کو حاصل کرنے کیلئے پہونچنے والے افراد خاندان پوری طرح غم میں ڈوبے ہوئے اشک بار ہورہے تھے ۔ میت کے حصول کیلئے افراد خاندان شاد نگر پہونچنے کی اطلاع پاکر میڈیا کے نمائندے اور پولیس جمعیت بڑی تعداد میں سرکاری ہاسپٹل میں جمع تھی ۔ نعیم کے افراد خاندان ہاسپٹل پہونچنے پر افراد خاندان کی تفصیلات حاصل کرنے کے بعد نعیم کا پوسٹ مارٹم روم میں دیدار کروایا ۔ ہاسپٹل کے اندر پہونچنے والے افراد خاندان کے علاوہ دیگر رشتہ دار ہاسپٹل میں داخل ہوئے لیکن پولیس کے سخت رویہ کی وجہ سے یا پھر خوف کی وجہ ہاسپٹل میں کچھ دیر توقف کے بعد روانہ ہوگئے ۔ گورنمنٹ ہاسپٹل شاد نگر اور اس کے اطراف و اکناف میں پولیس کا بھاری بندوبست پولیس کی جانب سے کیا گیا ۔ بلاآخر شاد نگر میں کل سے پولیس اور عوام کے درمیان پھیلی بے چینی آج ختم ہوئی ۔ شاد نگر سرکل انسپکٹر کرشنیا نے نعیم کی میت کو حاصل کرنے کیلئے پہونچے افراد خاندان نعیم کی بہن عائشہ بیگم ، ساجدہ شاہین ، عافیہ سلطانہ فہیم ، ایم اے سلیم ، نظیر احمد کے حوالے کردیا ۔ پولیس کی سخت نگرانی میں شاد نگر گورنمنٹ ہاسپٹل سے بھونگیر نعیم کی میت کو امبولینس گاڑی کے ذریعہ بھونگیر روانہ کردیا گیا ۔ نعیم کی نعش کو حوالے کرنے کے بعد مقامی پولیس نے راحت کی سانس لی ۔ میت کی روانگی کے موقع پر پولیس کی بھاری جمعیت کے علاوہ عوام بڑی تعداد میں یہاں موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT