Saturday , November 18 2017
Home / ہندوستان / غیرشادی شدہ لڑکیاں سیل فون استعمال نہیں کرسکتیں گجرات کے ایک موضع میں پنچایت کے سخت احکامات

غیرشادی شدہ لڑکیاں سیل فون استعمال نہیں کرسکتیں گجرات کے ایک موضع میں پنچایت کے سخت احکامات

احمدآباد ۔ 18 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی ساری دنیا میں ہندوستان کو ایک ڈیجیٹل انڈیا بنانے کیلئے کوشاں ہیں لیکن ان کی ریاست گجرات میں ضلع مہسانہ کے ایک موضع میں پنچایت نے غیرشادی شدہ لڑکیوں پر سیل فون استعمال کرنے کے خلاف پابندی عائد کردی ہے۔ وزیراعظم کا آبائی ضلع مہسانہ کی کھپ پنچایت نے غیرشادی شدہ لڑکیوں کے پاس فون رہنے پر 2,100 روپئے جرمانہ عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ لڑکیوں کے پاس فون ہونے کی اطلاع دینے والے کو 200 روپئے کا انعام دیا جائے گا۔ سورج موضع کے سرپنچ دیوش وینکار نے کہا کہ آخر لڑکیوں کو سیل فون کی کیا ضرورت ہوتی ہے؟ انٹرنیٹ وقت کی تباہی کا ذریعہ ہے۔ ہم جیسے متوسط خاندانوں کیلئے پیسہ کی بربادی ہے۔ لڑکیوں کو اپنا سارا وقت تعلیم اور دیگر گھریلو کام کاج میں گذارنا چاہئے۔ اس پنچایت نے احکام میں ایک رعایت یہ دی گئی ہے کہ اگر کوئی رشتہ دار لڑکی سے فون پر بات کرنا چاہتا ہے تو لڑکی کے والدین ہی اسے فون دے سکتے ہیں۔ اس موضع کے تمام لوگوں نے جو 2500 نفوس پر مشتمل ہے، کھپ پنچایت کے فیصلہ کی حمایت کی۔ سورج موضع میں غیرشادی شدہ لڑکیوں پر فون کے استعمال کی پابندی 12 فبروری کو نمائندگی کی گئی لیکن شمالی گجرات کے ہر ایک علاقہ میں یہ بات پھیل چکی ہے کہ لڑکیوں پر سخت پابندیاں ہیں

TOPPOPULARRECENT