Saturday , December 16 2017
Home / شہر کی خبریں / غیرمجاز تعمیرات کو باقاعدہ بنانے احکامات کی اجرائی میں تاخیر

غیرمجاز تعمیرات کو باقاعدہ بنانے احکامات کی اجرائی میں تاخیر

حکومت رہنمایانہ خطوط کو قطعیت دینے میں مصروف، سیکریٹریٹ سے گرین سگنل کا انتظار
حیدرآباد۔ 29 اکتوبر (سیاست نیوز) گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن حدود میں غیرمجاز تعمیرات و غیرمجاز لے آؤٹس کو باقاعدہ بنانے حکومت کی کوششوں اور احکامات کی اجرائی کیلئے ہفتہ دس دن تاخیر ہونے کا قوی امکان ہے کیونکہ غیرمجاز تعمیرات و لے آؤٹس کو باقاعدہ بنانے جاری کئے جانے والے رہنمایانہ خطوط کو قطعیت دینے کیلئے کچھ وقت درکار ہونے کی اطلاعات ہیں۔ سرکاری ذرائع نے یہ بات بتائی اور کہا کہ غیرمجاز تعمیرات و لے آؤٹس کو باقعدہ بنانے سے متعلق رہنمایانہ خطوط کا مسودہ مرتب کرلیا گیا ہے لیکن اس مسودہ کو نہ ہی محکمہ قانون و انصاف اور نہ ہی چیف منسٹر سیکریٹریٹ سے متعلقہ محکمہ بلدی نظم و نسق کو کسی قسم کا گرین سگنل نہیں ملا ہے، تاہم کمشنر گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن مسٹر سومیش کمار نے وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی و پنچایت راج مسٹر کے ٹی راما راؤ سے ملاقات کرکے جی ایچ ایم سی حدود میں غیرمجاز لے آؤٹس کے پلاٹس کو باقاعدہ بنائے جانے کی صورت میں تعمیراتی سرگرمیوں میں مزید تیزی پیدا ہونے سے متعلق واقف کروایا اور اس بات کی خواہش کی کہ باقاعدہ بنانے کیلئے جاری کئے جانے والے احکامات سے قبل کسی امکانی قانونی پیچیدگیوں و قانونی مسائل پیدا نہ ہونے کیلئے سیکریٹری محکمہ قانون و انصاف سے تبادلہ خیال کرنا بہت بہتر ہوگا تب مسٹر کے ٹی راما راؤ نے فی الفور سیکریٹری محکمہ قانون و انصاف سے ٹیلی فون پر ربط پیدا کرکے تفصیلی تبادلہ خیال کرنے کی اطلاعات ہیں اور سمجھا جاتا ہے کہ سیکریٹری محکمہ قانون و انصاف نے بتایا کہ اس اسکیم کو (غیرمجاز تعمیرات و لے آؤٹس کو باقاعدہ بنانے کی اسکیم کو) سابق حکومتوں میں بھی روبہ عمل لایا گیا اور کوئی قانونی پیچیدگیوں کے امکانات نہ پیدا ہونے کا اظہار کیا۔ مسٹر راؤ نے غیرمجاز تعمیرات کو اور غیرمجاز لے آؤٹس کو باقاعدہ بنانے (ایل آر ایس) لینڈ ریگولائزیشن اسکیم اور (بی بی ایس) بلڈنگ ریگولرائزیشن اسکیم کے رہنمایانہ خطوط کو اندرون ایک ہفتہ قطعیت دینے اور جی او کی اجرائی کیلئے راہ ہموار کرنے کی مسٹر سومیش کمار کو ہدایات دی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT