غیرمنظم شعبے میں اقل ترین اجرتوں کیلئے سپریم کورٹ میں عرضی نامنظور

نئی دہلی ، 12 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج سماجی جہدکار سوامی اگنی ویش کی داخل کردہ مفاد عامہ کی درخواست کو قبول کرنے سے انکار کردیا۔ یہ عرضی غیرمنظم شعبے کے لگ بھگ 50 کروڑ ورکرز کیلئے اقل ترین اجرتیں طے کرانے کیلئے دائر کی گئی تھی۔ چیف جسٹس رنجن گگوئی اور جسٹس ایس کے کول کی بنچ نے جہدکار سے کہا کہ راحت کیلئے متعلقہ حکام سے رجوع ہوں۔ پی آئی ایل میں استدعا کی گئی تھی کہ غیرمنظم شعبے کے ورکرز کیلئے اقل ترین اجرتیں مقرر کی جائیں اور کہا کہ اس شعبے میں 50 کروڑ ورکرز ملازم ہیں اور دستور کے آرٹیکل 14 (قانون کی نظر میں مساوات)، 21 (زندگی اور شخصی آزادی کا تحفظ) اور 39 (مملکت کی اختیار کی جانے والی پالیسی کے اُصول) کے تحت اُن کے حقوق کی خلاف ورزی ہوئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT