Sunday , April 22 2018
Home / شہر کی خبریں / غیر مجاز تعمیرات اور بغیر منظورہ لے آوٹس کے اراضیات کی فروخت روکنے کے اقدامات

غیر مجاز تعمیرات اور بغیر منظورہ لے آوٹس کے اراضیات کی فروخت روکنے کے اقدامات

میٹرو پولیٹن ڈیولپمنٹ اتھاریٹی کی جانب سے آن لائن شکایات کی وصولی اور فوری کارروائی
حیدرآباد۔6فروری(سیاست نیوز) شہر حیدرآباد میں غیر مجاز تعمیرات اور غیر مجاز لے آؤٹس کے ذریعہ اراضیات کی فروخت کے عمل کو روکنے کے لئے حیدرآباد میٹروپولیٹین ڈیولپمنٹ اتھاریٹی نے آن لائن شکایت کی وصولی کے نظام کی شروعات کی ہے اور شہر میں جاری غیر مجاز تعمیرات کو فوری طور پر رکوانے اور ان کے انہدام کو یقینی بنانے کے لئے 6خصوصی ٹیموں کی تشکیل عمل میں لائی گئی ہے۔ کمشنر ایچ ایم ڈی اے مسٹر ٹی چرنجیولو نے شہر کو غیرمجاز تعمیرات اور غیر مجاز لے آؤٹس کے ذریعہ فروخت کی جانے والی اراضیات سے پاک بنانے کے لئے شروع کردہ اس منصوبہ کے متعلق واقف کرواتے ہوئے کہا کہ ریاستی حکومت کی جانب سے شہر میں غیر مجاز تعمیرات کو روکنے کے لئے سخت اقدامات کی ہدایات کے بعد ایچ ایم ڈی اے کی جانب سے آن لائن شکایت کے اندراج کا نظام شروع کیا گیا ہے اور آن لائن شکایت کرنے والے شکایت کنندگان ان کی شکایات پر کی جانے والی کاروائی کے متعلق مکمل تفصیلات سے آگہی حاصل کرسکتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ شکایت کے موصول ہوتے ہی ٹیم کو روانہ کیا جائے گا اور پنچنامہ کی تیاری کے بعد پنچنامہ ایچ ایم ڈی اے کی ویب سائٹ پر عوامی مشاہدہ کے لئے رکھا جائے گا تاکہ کاروائی کا عوام کو پتہ چل سکے۔ غیر مجاز تعمیرات کی نشاندہی کی صورت میں متعلقہ محکمہ اور مالکین جائیداد کو نوٹس جاری کی جائے گی لیکن اگر متعلقہ ادارہ کی جانب سے اندرون 10یوم کاروائی نہیں کی جاتی ہے تو ایسی صورت میں ایچ ایم ڈی اے اپنے طور پر غیر مجاز تعمیرات کو منہدم کرنے کے اقدامات کرے گا۔ کمشنر ایچ ایم ڈی اے نے بتایا کہ شہر میں کی جانے والی غیر مجاز تعمیرات کے متعلق شکایات کی وصولی پر فوری کاروائی کو یقینی بنانے کے لئے ایچ ایم ڈی اے نے اس نئے نظام کو متعارف کروانے کا فیصلہ کیا ہے کیونکہ شہر میں بارش کے پانی کی عدم نکاسی اور دیگر مسائل کے سبب شہر میں موجود بنیادی سہولیات متاثر ہونے لگی ہیں اور ان کو محفوظ کرنے کے علاوہ شہریو ںکو محفوظ ماحول اور معیاری بنیادی سہولتوں کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے ضروری ہے کہ شہر میں غیر مجاز عمارتوں کی تعمیر کو روکا جائے اور غیر مجاز لے آؤٹس کے ذریعہ فروخت کی جانے والی اراضیات کی فروخت کو بھی بند کروایا جائے ۔ حیدرآباد میٹروپولیٹین ڈیولپمنٹ اتھاریٹی نے جو نئی 6ٹیمیں تشکیل دی ہیں وہ شکایت موصول ہوتے ہی متحرک ہو جائیں گی اور دیگر متعلقہ محکمہ جات کو بھی الرٹ کردیا جائے گا کہ ان غیر مجاز عمارتوں یا لے آؤٹس کو تعمیری اجازت نامہ یا برقی کنکشن وغیرہ منظور نہ کیا جائے کیونکہ عام طور پر غیر مجاز تعمیرات کے بعد برقی و آبرسانی کنکشن حاصل کرتے ہوئے جائیداد مالکین اپنی تعمیرات کو جائز اور قانونی قرار دینے کی کوشش کرتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT