Tuesday , December 11 2018

غیر معلنہ برقی کٹوتی‘ صنعتوں کو بھاری نقصان

طلبہ بھی پریشان حال‘ ذہنی تناؤ میں اضافہ، صورتِ حال پر فوری کنٹرول کی ضرورت

طلبہ بھی پریشان حال‘ ذہنی تناؤ میں اضافہ، صورتِ حال پر فوری کنٹرول کی ضرورت

حیدرآباد۔ 23؍مارچ (سیاست نیوز)۔ ریاست میں جہاں موسم گرما کا ابھی ابھی آغاز ہورہا ہے۔ وہیں برقی پیداوار میں کمی کے باعث کسی اعلان کے بغیر وقفہ وقفہ سے برقی کٹوتی شروع ہوچکی ہے اور اس برقی کٹوتی کے نتیجہ میں نہ صرف صنعتی شعبہ کو مشکلات سے دوچار ہونے کا خدشہ لاحق ہونے کا امکان ہے بلکہ امتحانات کے سیزن کی وجہ سے طلبہ اپنی امتحانی تیاری متاثر ہونے کے باعث نہ صرف تناؤ کا شکار بلکہ زبردست مشکلات سے دوچار ہورہے ہیں۔ باوثوق ذرائع نے یہ بات بتائی اور کہا کہ برقی پیداواری صلاحیت میں کمی کے پیش نظر قبل از وقت برقی حصول کے لئے کوئی اقدامات نہیں کئے گئے بلکہ برقی عہدیدار برقی لائٹس کے مرمتی کاموں کے نام پر گھنٹوں برقی کٹوتی کرتے ہوئے عوام کے ساتھ ساتھ ہر شعبہ کو مشکلات سے دوچار کررہے ہیں۔

بتایا جاتا ہے کہ گرما کے آغاز کے ساتھ ہی ریاست بھر میں پائے جانے والے اس برقی بحران سے نمٹنے میں برقی عہدیدار بھی اپنے آپ کو بے بس محسوس کررہے ہیں۔ کیونکہ برقی پیداواری صلاحیت میں کمی کو دُور کرنے کے لئے اور قبل از وقت ہی دیگر ریاستوں سے برقی کے حصول کے لئے مؤثر اقدامات کئے جانے کی شدید ضرورت ہے، لیکن اس صورتِ حال پر خصوصی دِلچسپی نہ لیتے ہوئے ضروری اقدامات کرنے سے گریز کیا جارہا ہے اور کوئی بھی عہدیدار ذمہ داری لینے کے لئے تیار دکھائی نہیں دے رہے ہیں۔ اسی ذرائع کے مطابق بتایا جاتا ہے کہ اگر ابھی بھی برقی کے حصول کے لئے کوئی مؤثر اقدامات نہ کئے جانے کی صورت میں ریاست میں (تلنگانہ و سیما۔ آندھرا) شدید برقی بحران کا خدشہ لاحق ہوسکتا ہے اور اس کی ذمہ داری ریاستی برقی بورڈ کے ساتھ ساتھ ریاستی نظم و نسق پر بھی عائد ہوگی۔ باوثوق ذرائع کے مطابق بتایا جاتا ہے کہ سیما۔ آندھرا میں برقی سربراہی کی صورتِ حال تلنگانہ کے مقابلہ میں کافی بہتر ہے اور محض بعض سیما۔ آندھرا سے تعلق رکھنے والے برقی عہدیداروں کے غیر ذمہ دارانہ رویہ کی وجہ سے برقی بحران پیدا ہوا ہے۔

TOPPOPULARRECENT