Monday , December 11 2017
Home / ہندوستان / غیر ملکی خاتون کی عصمت ریزی کیس میں 5 ملزمین قصور وار

غیر ملکی خاتون کی عصمت ریزی کیس میں 5 ملزمین قصور وار

دہلی کی عدالت سے سزاء عمر قید دینے استغاثہ کی اپیل
نئی دہلی ۔ 9 ۔ جون : ( سیاست ڈاٹ کام) : دہلی پولیس نے آج شہر کی ایک عدالت سے یہ گذارش کی ہے کہ 2 سال قبل دہلی ریلوے اسٹیشن کے قریب ایک 52 سالہ ڈنمارک کی خاتون کی اجتماعی عصمت ریزی کے کیس میں 5 مجرمین کو سزائے عمر قید دی جائے جب کہ اس کیس میں مجرم قرار دئیے گئے افراد کے خلاف کل سماء کا اعلان کیا جائے گا ۔ اعظم ترین سزاء کی درخواست کرتے ہوئے استغاثہ نے یہ استدلال پیش کیا ، یہ جرم ایک غیر ملکی خاتون کے ساتھ انتہائی بربریت اور غیر انسانی طریقہ سے کیا گیا ہے اور ملزمین ملک کے وقار اور اعتبار کو مجروح کیا ہے ۔ اسپیشل پبلک پراسیکوٹر اٹل سریواستو نے سزاء کی نوعیت اور حجم پر بحث کرتے ہوئے کہا کہ جس طریقہ سے جرم کا ارتکاب کیا ہے وہ ، نئے قانون کے تحت ملزمین کو عمر بھر کے لیے قید کا متقاضی ہے ۔ چونکہ اجتماعی عصمت ریزی کا جرم ایک غیر ملکی شہری کے ساتھ کیا گیا ۔ لہذا سماج کو یہ واضح پیام دینے کی ضرورت ہے کہ ہندوستان میں قانون کی حکمرانی مقدم ہے اور گناہ گاروں کا انجام برا ہوگا ۔ تاہم قانونی امداد کے نمائندہ دنیش شرما نے ملزمین کی پیروی کرتے ہوئے یہ عذر پیش کیا کہ مجرمین کی عمر 20 سال سے کم اور غریب خاندان سے تعلق رکھتے ہیں ۔ ان کے ساتھ رحم کا معاملہ کرتے ہوئے اقل ترین سزاء قید 20 سال دی جائے ۔ ایڈیشنل سیشن جج رمیش کمار نے مباحث کے سماعت کے بعد سزاء کے بارے میں اپنا فیصلہ کل تک کے لیے محفوظ کردیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT