Monday , December 18 2017
Home / شہر کی خبریں / فاروق حسین کے خلاف مقدمہ میں پولیس کی عدم کارروائی

فاروق حسین کے خلاف مقدمہ میں پولیس کی عدم کارروائی

وزیر اعظم اور گورنر سے رجوع ہونے این آر آئی خاتون کا فیصلہ
حیدرآباد۔/11اکٹوبر، ( سیاست نیوز) برسر اقتدار ٹی آر ایس پارٹی کے رکن قانون ساز کونسل محمد فاروق حسین کے خلاف نامپلی پولیس اسٹیشن میں درج کئے گئے مقدمہ میں کوئی پیشرفت نہ ہونے پر این آر آئی خاتون نے وزیر اعظم اور ریاستی گورنر سے رجوع ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔ سوماجی گوڑہ پریس کلب میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے امتہ الواسع نے بتایا کہ فلیٹ کے تخلیہ پر اصرار کرنے کے نتیجہ میں انہیں گالی گلوج کرنے اور بدسلوکی کے مقدمہ میں پولیس کوئی کارروائی کرنے سے قاصر ہے۔ انہوں نے کہا کہ فاروق حسین میڈیا میں گمراہ کن بیانات دے رہے ہیں تاکہ اپنی کی ہوئی غلطی کی پردہ پوشی کی جاسکے۔ انہوں نے مزید کہا کہ خاتون سے کھلے عام گالی گلوج اور دھمکانے کے کیس میں پولیس خاموش تماشائی ہونے پر تشویش کا اظہار کیا ہے اور بتایا کہ وہ انصاف نہ ملنے پر وزیر اعظم، ریاستی گورنر اور امریکی قونصل خانہ سے رجوع ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔ امتہ الواسع نے بتایا کہ وہ گزشتہ دو سال سے ٹی آر ایس رکن قانون ساز کونسل کو امریکہ سے بذریعہ فون فلیٹ کا تخلیہ کرنے کیلئے اصرار کررہی تھیں اور انہوں نے دونوں کی گفتگو کی آڈیو ریکارڈنگ بھی میڈیا کے روبرو پیش کی۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایم ایل سی کے اس رویہ سے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی نیک نامی اور ٹی آر ایس پارٹی کی ساکھ متاثر ہورہی ہے۔ انہوں نے فاروق حسین سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ فلیٹ سے غیر مجاز قبضہ برخواست کریں اور ان سے کھلے عام معذرت خواہی کریں۔

TOPPOPULARRECENT