Sunday , June 24 2018
Home / اضلاع کی خبریں / فتنہ قادیانیت کی روک تھام ضروری

فتنہ قادیانیت کی روک تھام ضروری

بچوں کو دینی تعلیم سے آراستہ کرنے مسلمانوں کو علماء کی تلقین

بچوں کو دینی تعلیم سے آراستہ کرنے مسلمانوں کو علماء کی تلقین
مریال گوڑہ۔/14جون، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) جلسہ’ استقبال رمضان و حقوق قرآن۔ فتنہ ارتداد اور امت مسلمہ کی ذمہ داریاں ‘ کے عنوان سے ایک جلسہ ضلع نلگنڈہ کے گریڈی پلی منڈل میں منعقد ہوا۔ جلسہ کی صدارت مولانا مفتی امان اللہ قاسمی ناظم مدرسہ مدینتہ العلوم و نائب صدر جمعیتہ العلماء نلگنڈہ نے کی۔ جلسہ کا آغاز حافظ و قاری نظام الدین کی قرأت کلام پاک سے ہوا۔ مولانا ماجد نے نعت پاک سنانے کی سعادت حاصل کی۔ بعد ازاں خطبہ استقبالیہ مولانا مفتی صدیق احمد جنرل سکریٹری مجلس تحفظ ختم نبوت نلگنڈہ نے پیش کرتے ہوئے کہا کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا جب میری امت دنیا کو بڑی چیز سمجھنے لگے گی اسلام کی عظمت و وقعت ان کے دلوں سے نکل جائے گی اور امر بالمعروف و نہی عن المنکر چھوڑ بیٹھے گی تو وحی کی برکتوں سے محروم ہوجائے گی اور آپس میں گالی گلوج اختیار کرے گی تو اللہ کی نظروں سے گرجائے گی۔ انہوں نے خطبہ استقبالیہ جاری رکھتے ہوئے کہا کہ اللہ تبارک تعالیٰ نے جس طرح نسل انسانی کی تخلیق حضرت آدم علیہ السلام سے شروع فرمائی نبوت کا آغاز بھی آپ ہی سے شروع فرماکر کم و بیش ایک لاکھ 24ہزار انبیاء کے بعد حضرت سیدنا محمد صلی اللہ علیہ وسلم پر اس مبارک سلسلہ کو ختم فرمایا اور آپؐ پر تاج ختم نبوت رکھا۔اس موقع پر صدر جمعیتہ العلماء تلنگانہ و آندھرا پردیش و ایم ایل سی حافظ پیر شبیر احمد، زید محمد نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے رمضان مبارک کی فضیلت و عظمت بیان کی اور کہا کہ مسلمانوں کو چاہیئے کہ رمضان المبارک کی صحیح قدر دانی کرتے ہوئے نماز، روزہ اور تراویح کا اہتمام کریں۔ اپنے زیادہ تر اوقات مسجد کے ماحول میں گذاریں۔ رمضان میں بازاروں اور ہوٹلوں کو زینت نہ بنائیں۔ تمام برائیوں سے اپنے آپ کو دور رکھیں اور طاق راتوں کا اہتمام کریں۔ اس موقع پر مولانا سید احمد ومیض ندوی استاد حدیث جامع دارالعلوم حیدرآباد، مولانا عبدالقادر مفتاحی، مولانا مفتی عبدالوہاب، شیخ الحدیث جامعہ نورالہدی، مولانا عبدالباسط صدر مجلس علما گنٹور، مولانا مفتی محمود زبیر قاسمی، معتمد جمعیتہ العلماء تلنگانہ و آندھرا نے رد عیسائیت پر تفصیلی روشنی ڈالی۔ اس موقع پر مسلمانوں کی ذمہ داریوں کے عنوان سے بھی ان علمائے کرام نے تفصیلی روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ دور حاضر میں عیسائی مشنریز مسلمانوں کے ایمان کو خریدنے کیلئے ہر طرح کی سازشیں رچ رہی ہیں اور بھولے بھالے مسلمانوں کو بہلا پھسلا کر چند روپیوں کے عوض ان کے ایمان کا سودا کررہی ہیں۔ ان حالات میں مسلمانوں، علماء اور دانشوروں کو چاہیئے کہ وہ ان بھولے بھالے مسلمانوں کو ان کے فنتوں اور سازشوں سے بچاتے ہوئے سازشوں کا موثر جواب دیں۔ اس طرح دور حاضر کے دوسرے بڑے فتنہ قادیانیت کا ذکر کرتے ہوئے ان علمائے کرام نے کہا کہ یہ مسلمانوں کے بھیس میں آکر مسلمانوں کے ایمان پر ڈاکہ ڈال رہے ہیں۔ اس بڑے فتنہ قادیانیت کی روک تھام کیلئے تمام علمائے کرام اور ائمہ مساجد کو آگے آتے ہوئے ان کے وجود کے خاتمہ تک جدوجہد کرنا چاہیئے۔ اس موقع پر علمائے کرام نے مسلمانوں پر زور دیا کہ وہ اپنی اولاد کو دینی تعلیم سے آراستہ کرتے ہوئے اسلامی تعلیمات کو دوسروں تک پہنچانے کی کوشش کریں۔ مولانا مفتی سید صدیق احمد نے شکریہ ادا کیا۔

TOPPOPULARRECENT