Tuesday , December 12 2017
Home / دنیا / فرانس میںدہشت گرد حملے کے مہلوکین کا سوگ

فرانس میںدہشت گرد حملے کے مہلوکین کا سوگ

پیرس۔15نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) ہزاروں فرانسیسی فوجیوں کو آج پیرس کے اطراف تعینات کردیا گیا ۔ سیاحتی مراکز کے اطراف بھی سخت حفاظتی انتظامات کئے گئے ہیں ۔ پیرس دنیا کا سب سے زیادہ سیاحوں کی آمد کا مرکز ہے ۔ تحقیقات کنندوں نے مشتبہ خودکش بم برداروں کے رشتہ داروں سے تفتیش کی۔ دولت اسلامیہ نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کرلی ہے جس میں 129افراد ہلاک اور 350سے زیادہ زخمی ہوگئے تھے ۔ اس حملہ کا پوری دنیا پر اثر مرتب ہوا ہے ۔ حفاظتی انتظامات پورے فرانس بلکہ پورے یورپ میںسخت کردیئے گئے ہیں ۔  عام طور پر یورپ کی سرحدیں ہمیشہ کھلی رہتی ہیں لیکن اب بحری سرحدات پر بھی حفاظتی انتظامات میں شدت پیدا کردی گئی ہے ۔ امریکی ڈیموکریٹک پارٹی کے صدارتی امیدوار نے کل رات ایک مباحثہ کے دوران کہا تھا کہ دولت اسلامیہ پر قابو پانا کافی نہیں اسے شکست دینی چاہیئے ۔ علاوہ ازیںانہوں نے کہا تھا کہ یہ صرف امریکہ کی ذمہ داری نہیں بلکہ پوری دنیا کی ذمہ داری ہے‘ تاہم امریکہ اس کی قیادت قبول کرسکتا ہے ۔ پولیس نے مشتبہ دہشت گرد کے والد ‘ بھائی اور دیگر رشتہ داروں کو کل رات حراست میں لے لیا تھا اور آج اُن سے تفتیش کی جارہی ہے ۔ ایک صدارتی عہدیدار کے بموجب یونان میں ایک شخص جس کے پاس شام کا پاسپورٹ تھا‘3اکٹوبر کو لیروس پہنچا تھا جو یونان کا مشرقی جزیرہ ہے جہاں شام میں جنگ سے بچ کر فرار ہونے والوں کی لاکھوں کی تعداد پہنچ چکی ہے ۔ یہ لوگ جنگ اور غربت سے فرار حاصل کر کے یہاں پہنچے ہیں جسے یورپ کا باب الداخلہ سمجھا جاتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT