Saturday , August 18 2018
Home / Top Stories / فرانس کیساتھ مختلف شعبوں میں تعاون کے 15 معاہدے

فرانس کیساتھ مختلف شعبوں میں تعاون کے 15 معاہدے

نئی دہلی۔ 10 مارچ ۔( سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان نے فرانس کے ساتھ اعلی تعلیم میں تحقیق اور اختراع کے ساتھ ساتھ مختلف شعبوں میں پندرہ معاہدوں پر آج دستخط کئے ۔انسانی وسائل کو فروغ کے مرکزی وزیر پرکا ش جاوڈیکر اور فرانس کے اعلی تعلیم،تحقیق اور اختراع کے وزیر فیڈرک ویڈال کی موجودگی میں یہاں منعقدہ ’ہند۔فرانس نالج کانفرنس ‘میں دونوں ممالک کے کئی تعلیمی اداروں کے مابین قرارداد مفاہمت پر دستخط کئے گئے۔ اعلی تعلیم، تحقیق و اختراع کے شعبہ میں دونوں ممالک کے مابین یہ پہلی کانفرنس تھی۔ دونوں ممالک کی یونیورسٹیوں اور تحقیقی اداروں کے مابین نئے منصوبوں اور شراکت داری سے متعلق ان معاہدوں پر دستخط کئے گئے ہیں۔ان قرارداد مفاہمت میں اعلی تعلیم، تحقیق ، اختراع، اساتذہ کا تبادلہ اور سائنس کے شعبہ میں تعاون کرنا شامل ہے ۔ ان سے دونوں ممالک کے مابین تعلیمی شعبہ میں تعاون مضبوط ہوگا۔جاوڈیکر نے کہاکہ حکومت کی سطح پر پہلی بار ایسے معاہدے کئے گئے ہیں جن سے طلبا کے عالمی سطح پر باہمی تبادلہ کو فروغ ملے گا۔ کانفرنس میں تقریباََ 80ہندستانی اور 70فرانسیسی تعلیمی اداروں کے نمائندے موجود تھے ۔انہوں نے کہاکہ حکومت نے تعلیم کا معیار اونچا کرنے کیلئے کئی تحقیقی پارک قائم کئے ہیں اور تحقیق کیلئے کافی فنڈ دستیاب کرارہی ہے ۔ جاوڈیکر نے فرانسیسی اداروں کا تعاون پر زور دیتے ہوئے کہاکہ حکومت کا منصوبہ تمام کلاسوں کو ڈیجیٹل کرنے کا ہے ۔کانفرنس میں دونوں ممالک کے طلبا کی آمدورفت کو فروغ دینے کیلئے خلائی و ہوائی جہاز، ریاضت، انفارمیشن ٹکنالوجی ، زراعتی معیشت اور فوڈ پروسیسنگ ، ماحولیاتی توانائی، قدرتی وسائل ، نامیاتی کھاد، فن تعمیر اور شہری منصوبہ بندی پر غور کیا گیا۔اس موقع پر ویڈال نے کہاکہ فرانس کا منصوبہ 2022تک دس ہزار طلبا کو فرانسیسی تعلیمی اداروں میں مدعو کرنے کا ہے ۔ گزشتہ برس پانچ ہزار ہندستانی طلبا فرانس پہنچے ہیں۔ہندستان اور فرانس کے مابین ہوئے یادداشت مفاہمت کے مطابق دونوں ممالک ایک دوسرے کے تعلیمی سرٹیفکیٹ کو مسلمہ حیثیت دیں گے اور طلبا دونوں ممالک میں اعلی تعلیم حاصل کرسکیں گے ۔ یہ نظام سیکنڈری سطح سے لیکر ڈاکٹریٹ کی سطح تک کی تعلیم کے لئے قابل قبول ہوگا۔ انڈین انسٹی ٹیوٹ آف تکنالوجی (آئی آئی ٹی ) اندور نے پیرک کے انسٹی ٹیوٹ آف مائنس کے ساتھ تحقیقی معاہدہ کیا ہے ۔ اسی طرح سے جگر کی بیماری کے شعبہ میں تحقیق کے لئے بھی دونوں ممالک کے طبی اداروں میں قرارداد مفاہمت پر دستخط کئے گئے ہیں۔اس کے علاوہ ’’فرانسیسی۔ہندستانی ٹرسٹ‘‘ فرانس میں اعلی تعلیم کے لئے جانے والے ہندستانی طلبا کو مالی مدد دستیاب کرائے گا۔ یہ مالی مدد اسکالرشپ کے طورپر دی جائے گی۔

ہند۔فرانس تعلقات ’تاریخی‘ : میکرون
نئی دہلی ۔ 10 مارچ ۔( سیاست ڈاٹ کام ) فرانس کے صدر ایمانیول میکرون نے دہلی اور پیرس کے تعلقات کو تاریخی قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ ان کے چار روزہ دورہ سے دونوں ممالک کے درمیان خاص کر، دفاع اور سیکورٹی کے شعبوں میں باہمی تال میل کے ایک نئے دور کا آغاز ہوگا۔میکرون نے راشٹر پتی بھون میں روایتی استقبالیہ تقریب کے دوران کہا : ’’میں ہندوستان آکر بہت خوش ہوں اور مجھے بڑی خوشی محسوس ہورہی ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے گزشتہ سال جولائی میں اپنے فرانس دورے کے دوران مجھے اپنے ملک آنے کی دعوت دی تھی۔ میرا ارادہ دونوں ممالک کے درمیان خاص کر، دفاعی اور سیکورٹی کے شعبوں میں شراکت کا ایک نئے دور کا آغاز کرنے کا ہے‘‘۔ انہوں نے دونوں ممالک کے تعلقات کو تاریخی قرار دیتے ہوئے کہا: ’’میں سمجھتا ہوں کہ ہمارے درمیان بہت بہتر تال میل ہے ۔دو عظیم جمہوری ممالک کے درمیان تعلقات تاریخی ہیں‘‘۔اس سے قبل صدر رام ناتھ کووند اور وزیر اعظم مودی نے میکرون اور ان کی اہلیہ بریگت میری کلاؤڈ میکرون کا راشٹر پتی بھون میں استقبال کیا ۔ میکرون کے ساتھ ان کی کابینہ کے سینئر ارکان بھی آئے ہوئے ہیں۔وزیر اعظم مودی نے میکرون کا ہوائی اڈے پر استقبال کیا۔

TOPPOPULARRECENT