Saturday , September 22 2018
Home / شہر کی خبریں / فرقہ پرستی و غنڈہ گردی کی سیاست کا خاتمہ ناگزیر

فرقہ پرستی و غنڈہ گردی کی سیاست کا خاتمہ ناگزیر

ایماندار امیدواروں کو منتخب کریں،بھینسہ میں ویلفیر پارٹی کا جلسہ عام،جناب ملک معتصم خان اور دیگر قائدین کا خطاب

ایماندار امیدواروں کو منتخب کریں،بھینسہ میں ویلفیر پارٹی کا جلسہ عام،جناب ملک معتصم خان اور دیگر قائدین کا خطاب

مد ہول /20 مارچ ( تجمل احمد کی رپورٹ ) ملک میںبڑ ھ رہی فر قہ پر ستی کو روکنا نا گزیر آزادی سے اب تک پچاس ہزار سے زائد فرقہ وارانہ فسادات ہو چکے ہیں فر قہ وارانہ فسادات ہو تے نہیں ہیں ہمیشہ کر ائے جاتے ہیں یہ کو ئی اچانک رونما ہونے والا حا دثہ نہیں بلکہ ایک منظم و طے شدہ پا لسی پر سیاسی مقاصد کے تحت عملی اقدامات ہو تے ہیں فسادات میں بھی اقلیتی طبقہ خصوصاً مسلم آبادیوں کو بر بربادیوں سے دو چار ہونا پڑ تا ہے اس بات کااظہار جناب ملک معتصم خان صدر ویلفر پارٹی آف انڈیا آندھر پردیش و اڑیسہ و امیدوار رکن پا رلیمنٹ نظام آباد نے ایک عظیم الشان انتخابی جلسہ عام سے یو پی ایس نزد فنکشن ہال بھینسہ میں خطاب کر تے ہوئے کیا اور کہاکہ فر قہ واریت کی سیاست ملک کیلے خطرناک ہے ایسی سیاست کو روکنے کا وقت آچکا ہے آج بھینسہ شہر میں اس جلسہ عام میںسروں کا سمندر اس بات کی دلیل ہے کہ یہاں کی عوام ویلفر پارٹی آف انڈیا کے امیدواروں کو کامیاب کر تے ہوئے بھینسہ کو ترقی کی راہ لئے جا ئیں گے انہوں نے کہا کہ سیاست میںشریف و ایماندار افراد کو منتخب کریں بی جے پی ، آر ایس ایس جیسی پارٹیاں غنڈہ گر دی کی سیاست فسادات کی سیاست کر رہے ہیں۔ سیاست میں صاف و شفاف لوگوں کو لائیں وہ دوسروں کی عزت کر نے والے اور عوامی خدمت کا جذبہ ہو وہی قیادت کے لا ئق ہے چند لو گوں کے جذباتی با توں میں آکر پا نچ سال تک پر شا نیوں کا سامنا کر نا کو ئی عقل مندی نہیں ہے میو نسپل انتخابات کے بعد بھی ویلفر پا ٹی آف انڈیا اسمبلی و پا رلیمانی انتخابات میں حصہ لے گی آج کوئی پو چھے کے ڈبلیو پی آئی کا قیام ابھی کیوں ضروری تھا تو ہم کہتے ہیں کہ مسلمانوں نے سیکولر اور ہمددر سمجھنے والے افراد کو ایوانوں میں بھیجا لیکن قوم کے ساتھ دھوکا کیا گیا اگرایسے حالات پیدا نہ ہوتے تو ویلفر پارٹی کی ضرورت ہی نہیں تھی سیاسی لیڈرس سماج میں آپس میں لڑ تے ہیں تا کہ ان کی بد عنوانیاں کر پشن اور دیگر تر قیاتی کا موں کی جا نب عوام کا ذہن نہ جائے آج ہندوستان کے اس قانون پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ دو بچوں سے زائد بچے رہنے والے افراد کو انتخابات لڑ نے کی اجازت نہیں ہے جبکہ بڑ ے بڑ ے اسکنڈل کر نے والے لیڈرس کو انتخابات میں حصہ لینے کی اجازت ہے جس وقت یہ قانون بن رہا تھا

اس وقت ہمارے قائد ین نے کیوں نہیں کہاکہ مسلم پر سنل لا بورڈ کے خلاف ہے بچوں کی پیدائش یہ قدرتی نظام ہے اس سے روکنا خود جمہوریت کے خلاف ہے حیدر آباد میں مسلمانوں کی اکثر یت ہے لیکن یہاں سے کوئی آئی اے ایس ، آئی پی ایس آفیسر نہیں ہے اس کے ذمہ دار حکو مت اور سیاست داں ہے پہلے حیدر آباد کے افراد پورے اسٹیٹ کی نمائند گی کر تے تھے ویلفر پارٹی کسی بھی پارٹی کے خلاف نہیں ہے ویلفر پارٹی بد عنوانیوں ، کر پشن ، ظلم غنڈہ گر دی ، غنڈہ گری کی سیاست کے خلاف لڑ رہی ہے بھینسہ میں ویلفر پارٹی کسی سے لڑنا نہیں چا ہتی اور نہ کسی سے ڈرتی ہے انہوں نے بھینسہ کی عوام کے تجس کو دور کر تے ہوئے کہاکہ کل اگر مسلمانوں کو پو لیس گرفتار کر تی ہے تو ان کو کون رہا کرو ائیں گئے انہوں نے کہا کہ ویلفر پارٹی اگر کا میاب ہو تی ہے تو پو لیس اسٹیشن کسی مسلم نوجوان کیلئے ترسے گا اس کے علاوہ کسی بھی مصبیت میں ویلفر پارٹی یہاں کے مسلمانوں کے ساتھ قدم سے قدم ملا کر چلے گی ویلفر پارٹی بھینسہ کے حالات کو بد لنے کیلئے ہی قائم ہو ئی ہے انہوں نے پو لیس پر تنقید کر تے ہو ئے کہاکہ پو لیس پہلے عوام کی حفاظت کر یں بعد میں سیاسی لو گوں کی ویلفر پارٹی ہندو مسلم میںیکسانیت پر یقین رکھتی ہے ہندوستان میں مسلمان اور دلت سب ایک ہو جائیں تو سونیا گا ندھی منمو ہن سنگھ ہماری بات سنیں گے آج اگر تلنگانہ تحریک میں مسلمانوں کی حصہ داری نہ ہوتی تو آج مسلمان کس زبان سے کہتے کہ مسلمانوںنے تحریک تلنگا نہ میں حصہ لیا تھا آج مسلمان کا سرا ونچا ہے جناب شفیع اللہ خان جنرل سیکریڑی ویلفر پارٹی آف انڈیا آندھر پر یش نے خطاب کر تے ہوئے کہاکہ تین سالوں میں ملک کی بارہ ریاستوں میں ویلفر پارٹی کا قیام عمل میں آچکا ہے اس پارٹی کا مقصد غنڈہ گردی روپیوںاور شراب کی سیاست کو ختم کر نا ہے اور ایک صاف و شفاف ویلفر اسٹیٹ قائم کر نا چا ہتی ہے یہاں کی بے روز گاری کو دور کرنا سرکاری دواخانوں میں سہولیات فراہم کر نا فر قہ پر ستی کا خا تمہ اس پارٹی کا اولین مقصد ہے مسلمان ایس سی اور ایس ٹی سے بھی پسماندہ ہیں انسان کا تحفظ اور حقوق دلوانے کیلے آپ کی طاقت کی ضرورت ہے تلنگانہ کی تحر یک میں ملک معتصم خان صدر ویلفر پارٹی نے بر وقت فیصلہ نہ کیا ہو تا تو آج مسلمان کس زبان سے دعوی کر تے کہ ہم تلنگانہ تحریک کے حصہ دار ہیں آج کسی ملائی کے لال میں دم نہیں کہ مسلمان تحریک تلنگانہ کے حصہ دار نہیں ہیں جناب عابد فاروقی ضلعی صدر ویلفر پارٹی آف انڈیا ضلع نظام آباد نے خطاب کر تے ہوئے کہاکہ ویلفر پارٹی کا مقصد عوامی خدمت ہے حال ہی میں بھینسہ شہر کے غریب مسلم تاجرین کو ماسٹر پلان کے نام پر بے روز گار کر دیا گیا آج سینکڑوں خاندان بے روزگاری کی زند گی بسر کر نے پر مجبور ہیں لیکن یہاں غریب مسلمانوں کا پر سان حال نہیں اس نا زک مو قع پر ہمارے ویلفرپارٹی صدر ایم ایم خان نے حیدر آباد سے بھینسہ پہنچ کر متا ثر تا جرین سے ملاقات کر تے ہوئے انہیں دلاسہ دیا

اور پو لیس کے اعلی عہدیداروں سے نمائند گی کی ویلفرپارٹی غریبوں کی پارٹی ہے کمزوروں کی پارٹی ہے انہوں نے کہاکہ ہر انسان کو انسان کی نظرسے دیکھیں ہندو ، مسلم ، دلت طبقہ میں یکسانیت اس پارٹی کا نصب العین ہے ایم ایم خان جیسے ہر دل عزیز قائد کی آج ضرور ت ہے شہر بھینسہ سے ویلفر پارٹی کے 12 امیدوار کونسلر سے میدان میں ہے ان کا نشان آٹو ہے ان کو کا میاب کر تے ہو ئے بھینسہ کی غربت ، بھینسہ کی بے روز گاری ، بھینسہ کی ترقی کویقینی بنا نے کا عوام سے اپیل کی جناب سید آصف صدر ویلفر پارٹی بھینسہ منڈل نے اس انتخابی جلسہ عام سے خطاب کر تے ہو ئے کہا کہ بہت جلد بھینسہ کی تر قی ممکن ہے چو نکہ آج ہماری طاقت ویلفر پارٹی ہے ویلفر پارٹی کے قیام کی کچھ لو گ مخالفت کر رہے ہیں ہندوستان میں سینکڑوںپارٹیاں ہیں لیکن مسلمانوںکی دو پارٹیاں ہو نابرداشت نہ کر نا ظلم سے کم نہیں اس بات کی بھی علامت ہے کہ آج ہم حق کیلے لڑ رہے ہیں آج بھینسہ میں افوہوں کا بازار گرم ہے اس پر کان نہ دھرنے کی عوام سے اپیل کی انہوں نے جذباتی انداز میں اپنے خطاب میں کہاکہ حق کی راہ میں مجھے دھمکیاں دی جا رہی ہیں لیکن اس کی مجھے کو ئی پرواہ نہیں میں حق کی خا طراپنی جان بھی دے سکتاہوں ان کے خطاب کے دوران نعرے جلسہ گاہ میں گو نج رہے تھے انہوں نے اپنے خطاب کو جاری رکھتے ہوئے کہاکہ گذشتہ چھ ماہ سے ویلفر پارٹی سے وابستہ ہو چکے تھے لیکن حال ہی میں باضابطہ اعلان کر تے ہوئے ڈبیلوپی آئی کے دفتر کا افتتاح بھینسہ عمل میںلایا گیا آج بھی ویلفر پارٹی کو دبانے کی ہر ممکن کو شش کی جارہی ہے یہ ویلفر پا رٹی کی آواز کو نہیں بلکہ حق کو دبانے کی کو شش ہے ہندوستان آزاد ہو کر 67 سال کا عر صہ گز ر چکا ہے لیکن آج بھی بھینسہ کے نوجوانوں کو غلامی کی زنجیروں میں جکڑ نے کی نا کام کو شش کی جارہی ہے لیکن اب کسی کی غنڈ ہ گر دی کی سیاست چلنے والی نہیں

آج ویلفر پارٹی کی طاقت بھینسہ کے ایک ایک شہری کے ساتھ ہے انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ آٹو کے نشان کے حق میں اپنے ووٹ کر ویلفرپارٹی کو کا میاب بنا نے کی عوام سے اپیل کی اس مو قع پر ویلفر پارٹی کے امیدواروں میں جناب سید آصف الدین وارڈ نمبر 5اور 19 سے ، جناب ابو رحیم وارڈ نمبر 11 سے عبد لجاوید ، وارڈ نمبر 9سے عبد العزیز ، وارڈ نمبر 1 سے نسرین بیگم ، وارڈ نمبر 10سے فا طمہ سعید ایڈوکیٹ وسو شل ورکر ، وارڈ نمبر 6 سے جناب اختر علی ، وارڈ نمبر 4سے محتر مہ مہر انسا ، وارڈ نمبر 13 سے عبدالمشیر ، وارڈ نمبر 8 سے وحیدہ بیگم ، وارڈ نمبر 7 سے عبد لجبار بنارسی ، وارڈ نمبر 12 کے امیدوار ہیں ویلفر پارٹی کے ذمہ داران و عوام کی کثیر تعداد مو جود تھی ۔

TOPPOPULARRECENT