Monday , June 25 2018
Home / اضلاع کی خبریں / فرقہ پرست و مفادپرست جماعتوں کو شکست دیں

فرقہ پرست و مفادپرست جماعتوں کو شکست دیں

کانگریس کو کامیاب بنانے کی اپیل،جگتیال میں جلسہ،ہنمنت راو اور مدھو گوڑ یشکی کا خطاب

کانگریس کو کامیاب بنانے کی اپیل،جگتیال میں جلسہ،ہنمنت راو اور مدھو گوڑ یشکی کا خطاب

جگتیال 9 مارچ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) تلگودیشم پارٹی کو ووٹ دینا بی جے پی فرقہ پرست جماعت کو ووٹ دینے کے مترادف ہے مودی کے دور اقتدار میں گجرات کے فسادات مسلمانوں کے سامنے ہے، ملک کی واحد سیکولر جماعت کانگریس پارٹی ہے، مرکز اور ریاست تلنگانہ میں کانگریس پارٹی کو اقتدار یقینی ہے، ان خیالات کا اظہار وی ایچ ہنمنت راو راجیہ سبھا ممبر اور رکن پارلیمنٹ مدھو گوڈ یشکی نے آج کانگریس پارٹی کے ایک بڑے جلسہ کو مخاطب کرتے ہوئے کیا ۔ بلدیہ انتخابات کے پیش نظر شہر کے 38 وارڈس کیلئے کانگریس کونسلرس کے دوڑ میں شامل امیدواروں کے ناموں کو پیش کرنے کیلئے اور کانگریس پارٹی کو کامیاب بنانے کیلئے کانگریس کارکنوں کو کمربستہ ہوجانے کیلئے جلسہ کا اہم مقصد ہے۔ اس موقع پر ہنمنت راو نے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس پارٹی کے دور اقتدار میں ہر طبقہ خوشحال اور ہر غریب بچھڑے طبقوں کی فلاح بہبود و ترقی کانگریس پارٹی سے ہی ممکن ہے،سونیا گاندھی کی قیادت میں کانگریس پارٹی ملک کی ترقی کررہا ہے اور تلنگانہ کی ساڑھے چار کروڑ عوام کے دیرینہ خواب کو صدر کانگریس پارٹی سونیا گاندھی نے اپنے وعدے کے مطابق پورا کیا، کتنی سیاسی جماعتیں اپنے مفاد کی خاطر تلنگانہ بل کی منظوری میں رکاوٹیں پیدا کرنے کے باوجود سونیا گاندھی نے اپنی خصوصی دلچسپی اور جستجو کے ساتھ تلنگانہ بل کو منظور کروایا ۔ کانگریس پارٹی جو وعدے کرتی ہے وہ پورا کرتی ہے مسلمانوں کو تحفظات کی فراہمی کانگریس کا کارنامہ ہے کانگریس پارٹی کے امیدواروں کو بھاری اکثریت سے کامیاب بناتے ہوئے ملک میں سیکولرازم کوبرقرار رکھنے کی اپیل کی۔ اس موقع پر رکن پارلیمنٹ مدھو گوڑ یشکی نے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ عہدے رہیں یا نہ رہیں عوامی خدمات کرنا کانگریس پارٹی کا اصول ہے، کانگریس پارٹی ملک میں ہر طبقہ کو بلا تفریق مذہب و ملت ان کی ترقی کیلئے اور فلاح بہبود کیلئے اقدامات کرنے والی جماعت ہے سونیا گاندھی تلنگانہ نے تلنگانہ ریاست کے قیام میں اپنے دیئے گئے وعدے کو پورا کیا جبکہ تلنگانہ تحریک کا بلند بانگ دعوے کرنے والی جماعت اور دیگر جماعتوں نے صرف اپنے مفادات کو ترجیح دی جسے عوام اچھی طرح جانتی ہے تلنگانہ کا قیام کسی کے مکتوب سے نہیں بلکہ شہیدوں کی قربانیوں اور اس کے ساتھ ہونے والی ناانصافیوں کے خلاف قائم ہوا ہے جو سونیا گاندھی کے جراتمندانہ فیصلے سے ہوا ہے ہمیں چاہئے کے کانگریس پارٹی کی کامیابی کیلئے ہمیں حصہ لیں اور فرقہ پرست جماعت کو شکست دیں،

حلقہ اسمبلی جگتیال سے جیون ریڈی کو کامیاب بنانے کی خواہش کی، انہوں نے کہا کہ تلنگانہ بل میں بی جے پی اور وائی ایس جگن اور چندرا بابو نے رکاوٹ پیدا کرنے کیلئے گھر گھر مہم چلائی اور دیگر جماعتوں نے کروڑہا روپیوں کا لالچ دیا تب بھی ان کی کوشش رائیگاں گئی ایسے سیاسی جماعتوں کو عوام کیسے ووٹ دے سکتی ہے؟۔ اس موقع پر سابق ریاستی وزیر ٹی جیون ریڈی نے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آندھرائی حکمرانوں کی غلامی سے بڑی مشکل سے نجات ملی ہے پھر انہیں دوبارہ اس علاقے میں ہم کیسے قدم رکھنے دیں یہ فیصلہ عوام کے ہاتھ میں ہے، چندرا بابو اور وائی ایس جگن اور کرن کمار پر سخت تنقید کی اور کانگریس کو کامیاب بنانے عوام سے اپیل کی ۔ اس موقع پر سابقہ بلدیہ چیر مین گری ناگا بھوشنم وائیس چیر مین خواجہ خلیل الدین ، بشیر الدین ، مصطفے کمال، محمد عبدالحمید نواب جانی، محمد مجیب الدین ،ساجد پٹواری، خواجہ حسیب الدین سراج الدین منصور ، محمد شکیل خان، میر کاظم علی، محمد محمود علی افسر، صلاح الدین منا، منیر الدین منا، عبدالباری، محمد چاند، کتہ موہن کے علاوہ سابقہ کونسلر اور کانگریس کارکنوں کی کثیر تعداد موجود تھی۔

TOPPOPULARRECENT